بھارتی روپے کی قدر میں ریکارڈ کمی

Image caption ایک امریکی ڈالر کے مقابلے بھارتی روپے میں ریکارڈ گراوٹ آئی ہے اور یہ اب تک کی سب سے کم قیمت پر مل رہا ہے

بھارت کے روپے کی قدر میں امریکی ڈالر کے مقابلے میں اب تک کی سب سے زیادہ گراوٹ آئی ہے۔

حکام کا کہنا ہے کہ یہ گراوٹ اس وقت آئی جب امریکہ کے فیڈرل ریزرو نے یہ عندیہ دیا کہ وہ اس سال کے آخر میں اپنی مالی سپورٹ واپس لینا شروع کر دے گا۔

جمعرات کو امریکی ڈالر کے مقابلے روپے کی قیمت 59.93 ہوگئی جبکہ بدھ کو روپے کی قیمت 58.72 تھی۔

مبصرین کا خیال ہے کہ روپے کی قدر میں گراوٹ سے اس بات کا اشارہ ملتا ہے کہ بھارت غیرملکی سرمائے کے بہاؤ پر انحصار کرے گا۔

نومورا میں ایشیائی کرنسی کی تجارت کے سربراہ سٹوئرٹ اوکلی کا کہنا ہے کہ ’رواں اکاؤنٹ میں خسارے کی وجہ سے سرمائے کی پرواز میں یہ بھارت کی کمزوری کی بہترین مثال ہے۔‘

بھارت کے رواں اکاؤنٹ کا خسارہ حالیہ دنوں میں اپنی ریکارڈ 6.7 فیصد کی سطح پر تھا۔

یاد رہے کہ خسارہ بیرونی ممالک کی کرنسی کی درآمد اور برآمد کے فرق پر منحصر ہوتا ہے۔

خسارہ اس وقت ہوتا ہے جب کسی ملک کی درآمدات اس کی کل برآمدات سے زیادہ ہوں اور خسارے میں اضافے سے ملک کے غیرملکی کرنسی کے ذخیرے متاثر ہوتے ہیں اور اس کے ساتھ اس ملک کی کرنسی کی قدروقیمت بھی متاثر ہوتی ہے۔

بھارتی روپے کو پہلے سے ہی خسارے کی حالت اور مہنگائی کی صورت میں دباؤ کا سامنا تھا۔

گزشتہ سال اکتوبر سے اب تک اس کی قدر میں 15 فیصد کی گراوٹ آئی ہے۔

اسی بارے میں