BBCUrdu.com
  •    تکنيکي مدد
 
پاکستان
انڈیا
آس پاس
کھیل
نیٹ سائنس
فن فنکار
ویڈیو، تصاویر
آپ کی آواز
قلم اور کالم
منظرنامہ
ریڈیو
پروگرام
فریکوئنسی
ہمارے پارٹنر
آر ایس ایس کیا ہے
آر ایس ایس کیا ہے
ہندی
فارسی
پشتو
عربی
بنگالی
انگریزی ۔ جنوبی ایشیا
دیگر زبانیں
 
وقتِ اشاعت: Monday, 09 March, 2009, 10:20 GMT 15:20 PST
 
یہ صفحہ دوست کو ای میل کیجیئے   پرِنٹ کریں
جموں، فوج کاجوان ہتھیارسمیت فرار
 
فائل فوٹو
فوج اور پولیس فرار شدہ فوجی کی تلاش کے لیے چھاپہ مار رہی ہے
ہندوستان کے زیرانتظام کشمیر کے جموں خطے میں فوج کا کہنا ہے کہ اس کا ایک جوان کچھ ہتھیاروں سمیت اپنے یونٹ سے فرار ہوگیا ہے۔ فرار شدہ فوجی کو پکڑنے کے لیے پولیس اور فوج نے تلاش شرع کی ہے۔

خبروں کے مطابق فرار ہونے والے فوجی کا نام ظفراللہ ہے جن کا تعلق جموں کے ڈوڈہ ضلع سے ہے۔ ظفراللہ بھارت کی بری فوج کے ایک جوان کی حیثیت سے کام کرتے تھے۔

جموں میں ایک پولیس افسر نے بی بی سی کو بتایا ہے کہ’ فوج نے اس بارے میں پولیس کو بتایا ہے اور فرار شدہ فوجی کو پکڑنے کے لیے ہم مشترکہ طور پر چھاپے مار رہے ہیں۔‘

پولیس کا کہنا ہے کہ فوج اپنے ہتھیاروں کی گنتی کر رہی ہے تاکہ یہ پتہ لگایا جاسکے کہ مذکورہ فوجی کتنا اسلحہ لیکر فرار ہوا ہے۔

پولیس کا کہنا تھا کہ وہ اس بات کی تصدیق کرتی ہے کہ ظفراللہ کا بھائی شدت پسند تنظیم حزب المجاہدین کا رکن ہے۔

ہندوستانی ذرائع ابلاغ میں اس طرح کی خبریں نشر کی جارہی ہیں کہ ظفراللہ اسلحے کے ساتھ فرار ہوکر شدت پسندوں کے گروپ میں شامل ہوگئے ہیں۔

لیکن بھارتی فوج کے بریگیڈیئر گردیپ سنگھ نے ایک پرائیویٹ ٹی وی چینل سے بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ’ چاہے ان کا بھائی شدت پسند ہی کیوں نا ہو لیکن فی الوقت یہ کہنا جلد بازی ہوگی کہ جوان نے لشکر یا کسی دیگر شدت پسند تنظیم کی رکنیت اختیار کر لی ہے۔‘

 
 
اسی بارے میں
جموں: فوجی آپریشن جاری
03 January, 2009 | انڈیا
تازہ ترین خبریں
 
 
یہ صفحہ دوست کو ای میل کیجیئے   پرِنٹ کریں
 

واپس اوپر
Copyright BBC
نیٹ سائنس کھیل آس پاس انڈیاپاکستان صفحہِ اول
 
منظرنامہ قلم اور کالم آپ کی آواز ویڈیو، تصاویر
 
BBC Languages >> | BBC World Service >> | BBC Weather >> | BBC Sport >> | BBC News >>  
پرائیویسی ہمارے بارے میں ہمیں لکھیئے تکنیکی مدد