ریما کے ساتھ ویب کاسٹ
 
قمر کیا کہتے ہیں
قمر کیا کہتے ہیں
 


بی بی سی ادرو نے ’کوئی تجھ سا کہاں‘ کے بارے میں فلم کے مصنف خلیل الرحمان سے بات کی۔

مصنف خلیل الرحمان قمر نے کہا ہے کہ زیر نمائش فلم’کوئی تجھ سا کہاں ‘ ان کی چھٹی فلم ہے اور وہ بہت خوش ہیں کہ ان کی یہ کاوش بھی کامیاب ہوئی ہے۔ اس سے قبل وہ پانچ فلمیں ’گھر کب آؤ گے‘، ’نکئی جئی ہاں‘، ’قرض‘، ’مکھڑا چن ورگا‘، اور ’نو پیسہ نوپرابلم‘ لکھیں جن میں سے چار فلمیں بزنس کے اعتبار سے بہت کامیاب رہیں، صرف ایک فلم ’نو پیسہ نو پرابلم‘ نے بزنس نہیں کیا۔

بی بی سی سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ یہ تاثر درست نہیں کہ اچھی فلم وہ ہوتی ہے جو زیادہ بزنس کرے۔ بعض اوقات ایسی فلمیں بھی بزنس کر جاتی ہیں جو اچھی نہیں ہوتیں، البتہ ایسی صورتحال فلم انڈسٹری کے لیے نقصان دہ ہوتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ جب تک اپنے سکرپٹ سے خود مطمئن نہیں ہوجاتے، ڈائریکٹر یا پروڈیوسر کے حوالے نہیں کرتے۔ ان کا کہنا تھا کہ جہاں تک زیر نمائش فلم ’کوئی تجھ سا کہاں ‘ کا تعلق ہے اس کے سکرپٹ پر انہوں نے بہت محنت کی، کئی بار پڑھا اور پھر اسے ریما کے حوالے کیا، جس کے بعد ریما نے اس پر محنت کی اور ایک اچھی فلم تیار ہوگئی۔

انہوں نے کہا کہ خوش قسمتی کی بات یہ ہے کہ یہ فلم جب سینما سکرین پر گئی تو لوگوں نے اسے پسند کیا۔ پاکستان کے علاوہ یہ فلم برطانیہ میں بھی ریلیز ہوئی ہے اور وہاں لوگوں نے اسے پسند کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ فلم اہل نظر کے لیے بنائی جاتی ہے اس وقت جو فلم انڈسٹری کا حال ہے اس میں فلم ’فلم کوئی تجھ سا کہاں ‘ تازہ ہوا کا ایک جھونکا ہے۔ فلم پر تنقید کے حوالے سے انہو ں نے کہا کہ انہوں نے اپنے کام پر تنقید کا ہمیشہ سے خیر مقدم کیا ہے کیونکہ اس سے مزید بہتری کے امکانات پیدا ہوتے ہیں۔

 

------------------------------------

 عارف وقار کا تبصرہ -
 

------------------------------------

 ریما کا غصہ -
 

------------------------------------

 قمر کیا کہتے ہیں -
 
^^ واپس اوپر Back to Index >>