Got a TV Licence?

You need one to watch live TV on any channel or device, and BBC programmes on iPlayer. It’s the law.

Find out more
I don’t have a TV Licence.

لائیو رپورٹنگ

پیشکش: عماد خالق, حسن بلال زیدی اور کومل فاروق

time_stated_uk

  1. ڈپٹی کمشنر: ’زخمی شیخ زید ہسپتال میں زیر علاج‘

    ٹرین

    ڈپٹی کمشنر رحیم یار خان جمیل احمد جمیل نے بی بی سی کو بتایا ہے کہ واقعے میں 65 افراد ہلاک ہوئے ہیں جبکہ 39 زخمیوں میں سے چھ کی حالت تشویش ناک ہے۔

    ان کے مطابق زیادہ تر مرنے والوں کی لاشیں جھلسنے کی وجہ سے ’ناقابل شناخت‘ ہیں۔ زخمی افراد رحیم یار خان کے شیخ زید ہسپتال کے برن سینٹر میں زیر علاج ہیں۔

    حکام کا کہنا ہے کہ ریسکیو آپریشن مکمل ہونے کے بعد لاشوں کی شناخت کے لیے ڈی این اے کا سلسلہ شروع کیا جائے گا۔

  2. وفاقی وزیر شیخ رشید: آگ ’سلنڈر اور چولہے‘ پھٹنے سے لگی

    View more on twitter

    وزیر ریلوے شیخ رشید کے مطابق تیز گام ایکسپریس لیاقت پور کے مقام پر حادثے کا شکار ہوئی اور اس کی تین بوگیاں ’سلنڈر اور چولہے‘ پھٹنے سے جل گئیں۔

    اس سے قبل انھوں نے بی بی سی کو بتایا تھا کہ متاثرین میں تبلیغی جماعت کا ایک وفد بھی شامل تھا جو لاہور میں ہونے والے اجتماع کے لیے سفر کر رہا تھا۔

  3. واقعہ کب اور کیسے پیش آیا؟

    ٹرین حادثہ

    پاکستان کے صوبہ پنجاب کے ضلع رحیم یار خان میں ایک مسافر ٹرین میں آگ لگنے سے حکام کے مطابق کم از کم 65 افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔ یہ آگ جمعرات کی صبح کراچی سے راولپنڈی جانے والی تیزگام ایکسپریس کی تین بوگیوں میں لگی۔