Got a TV Licence?

You need one to watch live TV on any channel or device, and BBC programmes on iPlayer. It’s the law.

Find out more
I don’t have a TV Licence.

لائیو رپورٹنگ

time_stated_uk

  1. کورونا وائرس: کووِڈ 19 کے علاج کے لیے ویکسین کب تک بن جائے گی؟

    کورونا

    پاکستان میں کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد 12 ہزار سے تجاوز کر چکی ہے اور چار ہزار سے زائد متاثرین کے ساتھ پنجاب سب سے زیادہ متاثرہ صوبہ ہے۔

    دنیا بھر کی طرح پاکستان میں بھی لوگ وبا کی بگڑتی صوتحال سے متفکر ہے۔

    اگرچہ دنیا بھر میں ڈیڑھ لاکھ سے زیادہ افراد کووڈ 19 کی وجہ سے ہلاک ہو چکے ہیں مگر ابھی تک ایسی کوئی دوا سامنے نہیں آئی ہے جو اس بیماری کا علاج کرنے میں ڈاکٹروں کی مدد کر سکے۔

    تو فی الحال ہم کورونا وائرس کے علاج کی دوا کی تیاری سے کتنا دور ہیں؟

    علاج ڈھونڈنے کے لیے کیا کام ہو رہا ہے؟ جاننے کے لیے کلک کریں

  2. پاکستان

    پاکستان میں کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد 12 ہزار سے بڑھ گئی ہے جبکہ اس وبا سے 279 افراد ہلاک ہوئے ہیں۔ گذشتہ 24 گھنٹوں میں پاکستان بھر سے ایک بار پھر سات سو سے زیادہ مریضوں کی شناخت ہوئی ہے جبکہ خیبر پختونخوا میں اب تک سب سے زیادہ 98 اموات ہوئی ہیں۔

    Catch up
    next
  3. اس صفحے کو اب مزید اپ ڈیٹ نہیں کیا جا رہا

    پاکستان میں کورونا وائرس کے مریضوں کی تعداد میں اضافہ ہو رہا ہے اور اموات بڑھ رہی ہیں۔

    بی بی سی کی تازہ ترین کوریج کے لیے یہاں کلک کریں

  4. کورونا وائرس: کووِڈ 19 کے علاج کے لیے ویکسین کب تک بن جائے گی؟

    کورونا

    پاکستان میں کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد 10 ہزار سے تجاوز کر چکی ہے اور چار ہزار سے زائد متاثرین کے ساتھ پنجاب سب سے زیادہ متاثرہ صوبہ ہے۔

    دنیا بھر کی طرح پاکستان میں بھی لوگ وبا کی بگڑتی صوتحال سے متفکر ہے۔

    اگرچہ دنیا بھر میں ڈیڑھ لاکھ سے زیادہ افراد کووڈ 19 کی وجہ سے ہلاک ہو چکے ہیں مگر ابھی تک ایسی کوئی دوا سامنے نہیں آئی ہے جو اس بیماری کا علاج کرنے میں ڈاکٹروں کی مدد کر سکے۔

    تو فی الحال ہم کورونا وائرس کے علاج کی دوا کی تیاری سے کتنا دور ہیں؟

    علاج ڈھونڈنے کے لیے کیا کام ہو رہا ہے؟ جاننے کے لیے کلک کریں

  5. کووڈ 19: کورونا وائرس سے صحت یاب ہونے میں کتنا وقت لگتا ہے؟

    کورونا

    کووڈ 19 کی وبا 2019 کےآخر میں پھیلی۔ لیکن ایسی علامات موجود ہیں کہ اس کے کچھ مریضوں کو مکمل صحتیاب ہونے میں کافی وقت لگ سکتا ہے۔

    ایک مریض کورونا سے صحتیاب کب ہوتا ہے یہ بیماری کی شدت پر منحصر ہے۔ کچھ لوگ اس بیماری سے جلدی صحتیاب ہوجاتے ہیں لیکن یہ ممکن ہے کہ کچھ مریضوں میں اس سے پیدا ہونے والے مسائل طویل مدتی ہوں۔

    آپ کی عمر، جنس اور صحت اس بات کا تعین کرتی ہے کہ آپ کووڈ 19 سے کس حد تک بیمار ہوسکتے ہیں۔

    تفصیلات پڑھنے کے لیے یہاں کلک کریں

  6. کورونا سے نمٹنے کے لیے گلگت بلتستان کے طبی اہلکاروں کی تربیت مکمل

    نیشنل ہیلتھ انسٹیٹیوٹ آف پاکستان کا کہنا ہے کہ گلگت بلتستان میں طبی اہلکاروں کو کووڈ 19 سے بچاؤ اور اس سے نمٹنے کے لیے تربیت فراہم کر دی گئی ہے۔

    ایک سوشل میڈیا پوسٹ کے ذریعے این آئی ایچ نے بتایا کہ گلگت بلتستان کے مختلف ہسپتالوں کے طبی اہلکاروں کو یہ تربیت ورچوئل ٹریننگ سینشنز کے ذریعے فراہم کی گئی۔

    View more on facebook
  7. بریکنگبلوچستان: مزید 55 افراد میں کورونا وائرس کی تصدیق

    کوئٹہ میں حکام کی جانب سے جاری تازہ اعداد و شمار کے مطابق آج مزید 55 افراد میں کورونا وائرس مثبت آیا ہے جس کے بعد متاثرہ مریضوں کی کل تعداد607 ہو گئی ہے۔

    صوبے میں اب تک کورونا وائرس کے لیے اب تک 18437 افراد کی سکریننگ کی جا چکی ہے۔

    تاہم 5897 افراد میں کورونا وائرس کے ٹیسٹ کے نتائج منفی آئے۔ تاہم اب بھی مشتبہ مریضوں کی تعداد 8358 ہے۔

    آج مزید 374 افراد کے کورونا ٹیسٹ کیے گئے۔ جس کے بعد صوبے میں اب تک کورونا کے کیے گئے مجموعی ٹیسٹس کی کل تعداد 6504 ہو گئی ہے۔

    صوبہ بلوچستان میں کورونا وائرس کے 174 مریض صحت یاب ہو چکے ہیں۔ جبکہ کورونا وائرس سے ہلاک ہونے والے مریضوں کی تعداد 08 ہے۔

  8. صدر

    منگل کو پاکستان کے صدر عارف علوی نے ایک پاکستانی نجی ٹی وی چینل کو انٹرویو دیتے ہوئے جو الفاظ استعمال کیے وہ سوشل میڈیا پر زیر بحث ہیں۔

    مزید پڑھیے
    next
  9. سابق ٹیسٹ کرکٹر صادق محمد اور ان کی اہلیہ کے کورونا ٹیسٹ لے لیے گئے

    کورونا

    پاکستان کے سابق ٹیسٹ کرکٹر صادق محمد اور ان کی بیگم کا کورونا ٹیسٹ لیا گیا ہے۔

    اس سلسلے میں ڈاکٹروں کی ایک ٹیم ان کے گھر گئی تھی۔ یاد رہے کہ 74سالہ سابق اوپننگ بیٹسمین نے ایک وڈیو پیغام کے ذریعے سندھ کی حکومت سے اپیل کی تھی کہ وہ کھانسی اور گلے کی تکلیف میں مبتلا ہیں وہ ہسپتال میں جاکر اپنا ٹیسٹ کرانا نہیں چاہتے کیونکہ وہاں کورونا وائرس کے مریض موجود ہوں گے۔

    صادق محمد کی اس وڈیو کے بعد وزیراعلیٰ سندھ کی ہدایت پر ڈاکٹرز کی ٹیم ان کے گھر گئی اور ان کے اور ان کی اہلیہ کے ٹیسٹ لیے گئے۔

    وزیراعلی سندھ نے فون کرکے صادق محمد کی خیریت بھی دریافت کی۔ ان کے ٹیسٹ کی رپورٹ جمعہ کے روز آئے گی۔

  10. راولپنڈی ریس کورس تھانہ کے ہیڈ کانسٹیبل میں کورونا وائرس کی تصدیق

    corona

    راولپنڈی کے ریس کورس تھانہ کے ہیڈ کانسٹیبل میں کورونا وائرس کی تصدیق ہونے کے بعد ایس پی پوٹھوہار سید علی نے محکمہ ہیلتھ کے تعاون سے تھانہ ریس کورس میں تعینات افسران و ملازمین کے ٹیسٹ کروائے۔

    ایس پی سید علی نے پولیس کے افسران و ملازمین کو صحت اور سوشل ڈسیٹنسنگ کا خیال رکھنے کی تاکید کی۔

    ترجمان راولپنڈی پولیس کے مطابق افسران کو ہدایت کی گئی کہ ’کسی بھی پولیس اہلکار میں بخار یا دیگر کوئی علامت ظاہر ہوتو فوراً اس کی اطلاع دیں۔‘

    اس موقعے پر سی پی او محمد احسن یونس کا کہنا تھا کہ ’کسی بھی پولیس افسر کے کورونا وائرس سے متاثر ہونے کی صورت میں بہترین علاج معالجہ کی سہولیات فراہم کی جائیں گی۔`

  11. عائشہ امتیاز

    بی بی سی ٹریول

    کراچی کی میمن مسجد

    کراچی کی میمن برادری اب ٹیکسٹائل، تعلیم، کھاد اور مالیاتی اداروں سمیت متعدد کاروباری شعبوں کا کنٹرول رکھتی ہے اور اس کی اقدار میں دولت کی قدر گہرائی تک رچی بسی ہوئی ہے۔

    مزید پڑھیے
    next
  12. بریکنگ’کورونا متاثرین کی نگرانی کے لیے آئی ایس آئی کا نظام استعمال کر رہے ہیں‘

    pak

    پاکستان کے وزیراعظم عمران خان نے سرکاری اور نجی ٹی وی چینلز پر جاری ٹیلی تھون میں بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملک میں کورونا وائرس کے متاثرین کی شناخت کرنے کے لیے جدید ترین ذرائع کا استعمال کیا جا رہا ہے۔

    ان کا کہنا تھا اس کام کے لیے ملک کی خفیہ ایجنسی آئی ایس آئی کی جانب سے نگرانی کا نظام دیا گیا ہے جسے عموماً دہشت گردوں کی نگرانی کے لیے استعمال کیا جاتا تھا۔

    ’ہمیں آئی ایس آئی نے زبردست سسٹم دیا ہوا ہے جو ٹریک اینڈ ٹریس میں مدد کرتا ہے۔ وہ تھا تو دہشت گردی کے خاتمے کے لیے لیکن اب وہ کورونا کے جو لوگ ہیں ان کے لیے کام آ رہا ہے۔‘

  13. کوووڈ 19: پاکستان میں بینکوں اور مالیاتی اداروں کے سرمایہ کاروں کے ڈیویڈنڈ معطل کرنے کا فیصلہ

    منافع معطلی پاکستان کے مرکزی بینک نے بینکوں اور مالیاتی اداروں کے حصص میں سرمایہ کاری کرنے والے افراد کے لیے ڈیویڈنڈ یعنی منافع کی تقسیم کو اگلی دو سہ ماہیوں کے لیے معطل کر دیا ہے۔

    یہ فیصلہ کووڈ 19 کی وبا سے پیدا ہونے والی غیر یقینی صورت حال اور اس کے نتیجے میں بینکوں کے قرضہ جاتی پورٹ فولیوز کے متاثر ہونے کے بلند تناسب کے امکان کو مدنظر رکھتے ہوئے کیا گیا ہے۔

    ایسے بینک اور مالیاتی ادارے جو 22 اپریل 2020 تک آخر مارچ کی سہ ماہی کے ڈیویڈنڈ (dividend)کی منظوری دے چکے ہوں، انہیں ہدایت کی گئی ہے کہ وہ جون اور ستمبر 2020ء کی سہ ماہیوں کے لیے اپنے ڈیوڈنڈ کی تقسیم معطل کر دیں۔

    دیگر تمام بینکوں کو ہدایت دی گئی ہے وہ مارچ اور جون 2020ء کے لیے ڈیوڈنڈ کی تقسیم معطل کر دیں۔

  14. بلوچستان: لاک ڈاؤن کی خلاف ورزی پر قرنطینہ مرکز منتقل کرنے کا فیصلہ

    بلوچستان

    ‎حکومت بلوچستان کے ترجمان لیاقت شاہوانی نے کہا ہے کہ لاک ڈاؤن کی خلاف ورزی کرنے والے شہریوں کو گرفتار کرکے ہزار گنجی قرنطینہ مرکز منتقل کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

    واضح رہے کہ بلوچستان میں کورونا کے مقامی منتقلی کے معاملات میں تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے۔ اس صورتحال کے پیش نظر بلوچستان میں ماسک پہننے یا کسی کپڑے سے منہ اور ناک ڈھانپنے کو لازمی قرار دیا گیا ہے۔

    ‎ایک بیان میں ترجمان کا کہنا ہے کہ ماسک، مفلر یا چادر سے ناک منہ نہ ڈھانپنے والے شہریوں کو بھی ہزار گنجی قرنطینہ منتقل کیا جائے گا۔

    اس سے قبل اس مرکز میں ایران سے آنے والے زائرین کو رکھا جارہا تھا۔

    ترجمان کے مطابق اب ‎ھزار گنجی قرنطینہ سے سارے ذائرین کو منتقل کر دیا گیا ہے۔

  15. ہمیں اب سمارٹ لاک ڈاؤن کی طرف جانا پڑے گا: وزیراعظم عمران خان

    imran khan

    پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ ’ہمیں اب سمارٹ لاک ڈاؤن کی طرف جانا پڑے گا۔‘

    وزیرِ اعظم کا کہنا تھا کہ سمارٹ لاک ڈاؤن کا مطلب ہے جہاں کورونا وائرس پھیلے تو اس جگہ کو کنٹرول کیا جائے۔

    وزیرِ اعظم عمران خان نے احساس ٹیلی تھون کے دوران میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں اب لوگوں کے لیے دکانیں کھولنا پڑیں گی۔

    ان کا مزید کہنا تھا کہ ’خوف ہے کہ چھوٹے کاروبار مکمل طور پر ختم نہ ہوجائیں۔‘

  16. بریکنگپاکستان کے زیر انتظام کشمیر کے مزید چار افراد میں کورونا کی تصدیق

    پاکستان میں متاثرین کی مجموعی تعداد 10931 ہو گئی ہے

    bbc

    پاکستان کے زیر انتظام کشمیر کے حکام کے مطابق اس خطے میں مزید چار افراد میں کورونا کی تشخیص ہوئی ہے جس کے بعد اس خطے میں کورونا وائرس سے متاثر ہونے والے افراد کی تعداد 55 ہوگی ہے۔

    نامہ نگار ایم اے جرال نے بتایا کہ ضلع راولاکوٹ کے ڈپٹی کمشنر مرزا ارشد کے مطابق تین افراد میں کورونا وائرس کی تشخیص ہوئی ہے جس میں دو کا تعلق راولاکوٹ سے ہے جو کراچی اور راولپنڈی سے الگ الگ سفر کر کے آئے تھے۔ ان افراد کو ان کے گھروں میں قرنطینہ کر دیا گیا تھا۔

    مرزا ارشد کے مطابق ایک شخص کا تعلق عباسپور سے ہے جو پہلے سے قرنطینہ میں موجود تھا۔

    ان کے مطابق مذکورہ شخص پنجاب میں سب سے پہلے کورونا وائرس سے ہلاک ہونے والے بزرگ سے اس وقت رابطے میں آیا جب وہ یہاں ایک عزیز کے نماز جنازہ میں شرکت کرنے آئےتھے۔

    ڈپٹی کمشنر مطابق عباسپور سے تعلق رکھنے والے دو افراد صحتیاب بھی ہوئے ہیں جس کے بعد اس خطے میں صحتیاب ہونے والے افراد کی تعداد 25 ہوگی ہے۔

    دوسری جانب ڈپٹی کمشنر سدھنوتی راجہ ندیم جنجوعہ کے مطابق ایک شخص میں کورونا کی تشخیص ہوئی ہے جو رحیم یار خان سے سفر کر کے آیا تھا جسے آتے ہی قرنطینہ سنٹر میں منتقل کر دیا گیا تھا۔

    corona
  17. بریکنگپاکستان کے زیر انتظام کشمیر میں لاک ڈوان میں چار ہفتے کی مزید توسیع

    کشمیر

    پاکستان کے زیر انتظام کشمیر کی حکومت نے لاک ڈاؤن میں مزید چار ہفتے کی توسیع کر دی ہے۔

    وزیر اعظم ہاؤس کی جانب سے جاری اعلامیہ کے مطابق اس خطے کے وزیراعظم آزادکشمیر راجہ فاروق حیدر خان کی زیر صدارت اجلاس منعقد کیا گیا جس میں وزرا اور بیوروکریٹس نے شرکت کی۔ اجلاس کے دوران اس خطے میں کورونا وائرس کو پھیلاو کو روکنے کے لیے لاک ڈاؤن میں مزید توسیع کرتے ہوئے فیصلہ کیا گیا کہ پاکستان کے دیگر صوبوں اور اس خطے اضلاع کے درمیان ہر قسم کی پبلک ٹرانسپورٹ مکمل بند رہے گی۔

    صحافی ایم کے جرال کے مطابق اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ شادی بیاہ اور ہر قسم کے اجتماع پر پابندی جاری رہےگی۔

    اعلامیے کے مطابق دکانوں کو احتیاطی تدابیر اختیار کرتے ہوے صبح 8 بجے سے 4 بجے دن تک کھولنے کی اجازت ہو گی جبکہ باربر اور پالرز کی دکانوں کے علاوہ بزرگوں اور بچوں کے مارکیٹ میں آنے پر مکمل پابندی ہو گی۔

    اعلامیہ کے مطابق اندرون ریاست ہفتے میں دو دن بروز جمعہ اور منگل مکمل لاک ڈاؤن کیا جائے گا۔دکانوں میں احتیاطی تدابیر پر عملدرآمد کروانا دوکاندار کی ذمہ داری ہوگی جبکہ طے شدہ ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کے مرتکب افراد کے خلاف موقع پر کارروائی کی جائےگی۔

    مساجد کے حوالے سے علما کرام کے ساتھ مل کر طے شدہ قواعد و ضوابط پر عملدرآمد کروایا جائے گا جس میں بزرگوں اور بچوں کا مساجد آنے میں پابندی ہوگی اور نماز کے دوران فاصلے سمیت کم سے کم تعداد کے علاوہ تمام احتیاطی تدابیر اختیار کی جاہیں گی جن میں نمازی جائے نماز گھروں سے لے کر آئیں گے۔

  18. پنجاب میں مزید 116 افراد میں کورونا کی تصدیق، لاہور میں متاثرین سب سے زیادہ

    lahore

    پاکستان کے صوبہ پنجاب میں پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کئیر کے ترجمان کے مطابق 23 اپریل کی شام 4 بجے تک کورونا وائرس کے مزید 116 کیس سامنے آنے کے بعد صوبے میں متاثرین کی تعداد 4706 ہو گئی۔

    کورونا وائرس سے اب تک صوبے میں کل 60 اموات ہوئی ہیں جبکہ 905 افراد صحت یاب ہوئے ۔ تاہم اب بھی 20 مریض تشویشناک حالت میں ہیں۔

    اب تک کل 66030 ٹیسٹ کیے جا چکے ہیں۔

    کورونا کے متاثرین میں 768 زائرین سنٹرز میں ، 1915 رائے ونڈ سے منسلک افراد، 86 قیدی، 1937 عام شہریوں میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی ہے۔

    عام شہریوں میں 99 نئے کیس، تمام کی تفصیل

    عام شہروں میں سب سے ذیادہ لاہور میں کورونا وائرس کے 849 کنفرم مریض ہیں۔

    ننکانہ 1، قصور 55، شیخوپورہ 18،راولپنڈی 190، جہلم 37، اٹک 11،چکوال 4، گوجرانوالہ 116، سیالکوٹ 59، ناروال 7، گجرات میں 167 شہریوں میں تصدیق ہوئی۔

    حافظ آباد 12، منڈی بہاوالدین 12، ملتان 35، خانیوال 3، وہاڑی 35، فیصل آباد 52، چینیوٹ 11، ٹوبہ 7، جھنگ 38، رحیم یار خان 62، سرگودھا میں 33 شہریوں میں تصدیق ہوئی۔

    میانوالی 12، خوشاب 9، بھکر 5، بہاولنگر 8، بہاولپور 11، لودھراں 3، ڈی جی خان 22، مظفر گڑھ 5، لیہ 2، اوکاڑہ میں 3 پاکپتن میں 4 کنفرم مریض ہے۔

    lahore

    جیل میں تمام کیسز کی تفصیل

    کیمپ جیل لاہور 59، سیالکوٹ 3، گوجرانوالہ 7، ڈی جی خان 9،جہلم میں 3، بھکر 2، فیصل آباد، قصور اور حافظ آباد میں ایک ایک قیدی میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی۔

    زائرین کی تفصیل

    ڈی جی خان 221 زائرین، ملتان457، فیصل آباد 23 اور گوجرانوالہ میں 42 کورونا وائرس کی تصدیق وئئ

    رائے ونڈ تبلیغی ارکان میں 17 نئےکیسز، تمام کی تفصیل

    رائے ونڈ مرکز میں 815، شیخوپورہ 12، منڈی بہاوالدین 33، سرگودھا 145، میانوالی 7، وہاڑی 46، راولپنڈی 30، اٹک 7، جہلم میں 54 تبلیغی ارکان میں تصدیق ہوئی۔

    ننکانہ 28، گجرات 10، گوجرانوالہ 21، رحیم یار خان 56، بھکر 67، خوشاب 32، راجن پور 19، حافظ آباد 35، سیالکوٹ 22، لیہ 38، مظفر گڑھ 61، ناروال 26، بہاولنگر 25، فیصل آباد میں 18 تبلیغی ارکان میں کورونا کی تصدیق۔ ہوئی۔

    خانیوال 6، ملتان میں 126، ساہیوال 8، اوکاڑہ 2، پاکپتن 13، بہاولپور 41 اور لودھراں میں 98 تبلیغی ارکان میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی۔

  19. خیبر پختونخوا میں کامیاب پول ٹیسٹنگ جاری

    corona

    پاکستان کے صوبے خیبر پختونخوا میں صوبائی وزیر صحت تیمور سلیم جھگڑا کا کہنا ہے کہ صوبے میں پول ٹیسٹنگ سسٹم کو کامیابی کیساتھ متعارف کروایا گیا ہے۔

    ان کا کہنا تھا کہ پول ٹیسٹنگ سسٹم کے اچھے نتائج سامنے آرہے ہیں۔ اور صوبے میں ٹیسٹنگ کی تعداد ایک ہزار تک پہنچا دی گئی ہے۔

    صوبائی وزیر صحت نے بتایا کہ 90% ٹیسٹ سرکاری لیبارٹریز میں کیے گئے ہیں اور ان ٹیسٹ کی تعداد کو آئندہ 2 ہفتوں میں دوگنا کیا جائے گا۔

    تیمور سلیم جھگڑا کے مطابق اب تک 12 ہزار ٹیسٹ کیے گئے ہیں جس میں 12 فیصد پازیٹیو آئے ہیں۔

    اس موقع پر صوبائی مشیر اطلاعات اجمل وزیر کا کہنا تھا کہ موجودہ حالات میں حکومت کے ساتھ عوام، علماء اور تاجر برادری کا تعاون قابل تحسین ہے۔

    انھوں نے کورونا کی وبا کو کنٹرول کرنے میں ڈاکٹرز، پولیس ، ریسکیو اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کی خدمات کو ناقابل فراموش قرار دیا۔

    مشیر اطلاعات نے بتایا کہ طورخم بارڈر کے ذریعے افغانستان سے آئے پاکستانیوں کو ضلع خیبر میں مختلف مراکز میں قیام دیا گیا ہے جہاں انہیں ہر ممکن سہولیات فراہم کی جا رہی ہیں۔

  20. سندھ: مصدقہ متاثرین کی تعداد 2671 ہو گئی، مجموعی اموات 73

    پاکستان

    سندھ میں گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس کے 298 نئے مصدقہ متاثرین سامنے آئے ہیں جبکہ صوبے میں مزید چار افراد اس وبا کے باعث دم توڑ گئے ہیں۔

    سندھ میں کورونا وائرس کی تازہ صورتحال کے حوالے سے آگاہ کرتے ہوئے وزیر اعلی سندھ سید مراد علی شاہ نے اپنے ایک ویڈیو پیغام میں آگاہ کیا ہے کہ اب صوبے میں مصدقہ متاثرین کی تعداد بڑھ کر 3671 جبکہ مجموعی اموات 73 ہو چکی ہیں۔

    مراد علی شاہ کا کہنا ہے کہ سندھ میں کورونا کے باعث شرح اموات 1.98 فیصد ہے۔

    انھوں نے کہا کہ صوبے میں کُل 2934 افراد زیرِ علاج ہیں جن میں سے 1871 مریضوں کو ان کے گھروں میں آئسولیٹ کیا گیا ہے، 640 حکومتی قرنطینہ سینٹرز میں ہیں جبکہ 423 افراد ہسپتالوں میں زیر علاج ہیں۔

    نئے کیسز کی تفصیلات

    وزیر اعلی سندھ کے مطابق نئے سامنے آنے والے 298 مریضوں میں سے 202 افراد کا تعلق کراچی جبکہ باقی 96 افراد کا تعلق صوبے کے دیگر شہروں سے ہے۔

    کراچی کے ضلع وسطی میں 29، ضلع شرقی میں 25، ملیر میں 79، جنوبی کراچی میں 63 جبکہ کراچی غربی میں چھ نئے کیس سامنے آئے ہیں۔

    اس کے علاوہ سکھر میں 20، شہید بینظیر آباد میں آٹھ، لاڑکانہ میں 11، دادو میں دو، گھوٹکی اور سجاول میں ایک، ایک نیا مریض سامنے آیا ہے۔

    وزیر اعلی سندھ نے بتایا کہ تبلیغی جماعت کے 5102 لوگوں کو ٹیسٹ کیا گیا ہے جس میں سے 764 افراد کا ٹیسٹ مثبت آیا ہے جبکہ 17 کا نتیجہ آنا باقی ہے