Got a TV Licence?

You need one to watch live TV on any channel or device, and BBC programmes on iPlayer. It’s the law.

Find out more
I don’t have a TV Licence.

لائیو رپورٹنگ

پیشکش: اعظم خان اور محمد صہیب

time_stated_uk

  1. بریکنگ’پاکستان کا ورلڈ کپ کے سیمی فائنل تک پہنچنے کا خواب ٹوٹنے سے بچ گیا‘

    اب یہ پیج مزید اپ ڈیٹ نہیں کیا جائے گا۔

    افغانستان کے کپتان گلبدین نائب نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا اور مقررہ 50 اوورز میں نو وکٹوں کے نقصان پر پاکستان کو جیت کے لیے 228 رنز کا ہدف دیا۔ شاہین آفریدی پاکستان کی طرف سے اپنی عمدہ بولنگ کے ذریعے چوٹی کے چار افغان بلے بازوں کو پویلین کی راہ دکھائی۔

    پاکستان کے اووپنرز وکٹ پر آئے تو پہلے ہی اوور کی دوسری گیند پر فخر زمان ایل بی ڈبلیو ہو گئے۔ ایمپائر کا فیصلہ ریوو کے بعد بھی برقرار رہا اور یوں فخر بغیر کوئی رن بنائے مجیب الرحمان کی بال پر آؤٹ ہو کرواپس پویلین لوٹ گئے۔

    اس کے بعد بابر اعظم آئے اور انھوں نے امام الحق کے ساتھ مل کر اننگز کو کچھ سنبھالا دیا لیکن امام سٹمپ آؤٹ ہو گئے۔ اس کے بعد پاکستان کی وکٹیں وقفے وقفے سے گرتی رہیں۔ عماد وسیم جہاں بولنگ میں کامیاب رہے آج ان کا بلا بھی رنز اگلتا رہا اور انھوں نے 49 رنز بنا کر پاکستان کا ورلڈ کپ کے سیمی فائنل تک پہنچنے کا خواب ٹوٹنے سے بچا لیا۔

    عماد
  2. بریکنگ’پوائنٹس ٹیبل پر پاکستان کی چوتھی پوزیشن‘

    پاکستان نے افغانستان کو شکست دے کر سیمی فائنل تک رسائی کی امید برقرار رکھی ہے۔ اب پاکستان کو اپنا اگلا میچ بنگلہ دیش سے لازمی جیتنا ہے جبکہ یہ بھی امید رکھنی ہے کہ انگلینڈ کم از کم اپنے دو میچوں میں سے ایک ضرور ہارے۔

    پوائنٹس
  3. افغانستان کا بولنگ کارڈ

    افغانستان کی جانب سے محمد نبی اور مجیب الرحمٰن نے دو دو وکٹیں حاصل کیں۔

    سکور کارڈ
  4. بریکنگحامد حسن کی انجری افغانستان کو مہنگی پڑی!

    حامد حسن کی انجری افغانستان کو بہت مہنگی پڑی جس کے باعث گلبدین کو باپنے تمام اوورز کرانے پڑے اور آخری اوورز میں جب یورکرز کی ضرورت تھی تو گلبدین ناکام رہے۔ انھیں اپنے 9.4 اوورز میں 73 رنز پڑے۔

    حامد
  5. بریکنگعماد وسیم میچ کے بہترین کھلاڑی قرار پائے

    عماد وسیم کو انتہائی دباؤ میں بیٹنگ کرتے ہوئے 49 رنز بنانے اور دو قیمتی وکٹیں حاصل کرنے پر میچ کے بہترین کھلاڑی کا اعزاز دیا گیا۔

    عماد وسیم کا کہنا ہے کہ جب وہ بلے بازی کرنے گئے تو اس وقت راشد خان بہت اچھی بولنگ کر رہے تھے۔ ایسے میں ان کے خلاف جارحانہ انداز اپنانا بے وقوفی تھی اور شروعات میں محتاط انداز میں کھیلنا ضروری تھا۔

    ان کا کہنا تھا کہ ہم نے اسی لیے گلبدین نائب کو نشانہ بنایا اور ہمیں اس کا فائدہ ہوا۔

    یاد رہے کے اصغر افغان نے گلبدین نائب کے اوور میں عماد وسیم کا کیچ بھی چھوڑا تھا۔

    عماد
  6. بریکنگپاکستان نے تین وکٹوں سے میچ جیت لیا!

    عماد وسیم نے گلبدین نائب کی گیند پر چوکا لگا کر پاکستان کو میچ جتوا دیا۔

    پاکستان کی جانب سے عماد وسیم نے 54 گیندوں پر سب سے زیادہ 49 رنز بنائے۔ افغانستان کی طرف سے محمد نبی اور مجیب الرحمٰن نے دو دو کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔

  7. بریکنگعماد وسیم سٹرائک پر!

    اور چوکا! عماد وسیم نے خوبصورت چوکا مار کر ہدف پورا کر لیا۔

    Imad
  8. بریکنگخراب فیلڈنگ کے باعث تیسری گیند پر دو رنز!

    پاکستان جیت کے قریب

  9. بریکنگوہاب ریاض سٹرائک پر!

    ایک بار پھر ایک رنز لیا گیا ہے۔ چوتھی گیند پر وہاب ریاض نے لیگ بائی پر ایک رن لیا ۔

    wahab
  10. بریکنگپہلی گیند پر ایک رن بنا

    عماد وسیم نے کور کی جانب شاٹ کھیل کر ایک رن بنایا

  11. بریکنگآخری اوور میں چھ رنز درکار

    چھ گیندوں پر پاکستان کو چھ رنز درکار ہیں۔ اس وقت سٹرائک پر عماد وسیم ہیں جنھوں نے 42 رنز بنائے ہیں۔

  12. بریکنگُوہاب کا شاندار چھکا!

    وہاب نے راشد خان کو مڈ وکٹ باؤنڈری کے اوپر سے شاندار چھکا مار کے پاکستان کے لیے ہدف مزید کم کر دیا ہے۔

  13. بریکنگآخری اوور کون کرائے گا؟

    حامد حسن انجری کے باعث بولنگ نہیں کریں گے۔ اس لیے آخری اوور یا تو گلبدین نائب کرائیں گے یا سمیع اللہ شنواری کو یہ ذمہ داری سونپی جائے گی۔

  14. بریکنگ’ایک وکٹ اور 10 رنز‘

    پاکستان نے راشد خان کے نویں اوور میں 10 رنز بنائے جبکہ شاداب خان اس اوور میں رن آؤٹ ہوئے۔

  15. بریکنگپاکستان کو 18 گیندوں پر 18 رنز درکار

    پاکستان کی صرف تین وکٹیں باقی ہیں۔

  16. بریکنگشاداب رن آؤٹ ہو گئے

    شاداب خان نے 17 گیندوں پر 11 رنز بنائے لیکن وہ بھی کپتان سرفراز کی طرح رن آؤٹ ہو گئے۔

    View more on twitter
  17. بریکنگشاداب کا چوکا

    پاکستان کو 21 گیندوں پر 23 رنز درکار

  18. بریکنگپاکستان کے 200 رنز مکمل

    پاکستان کو جیتنے کے لیے 24 گیندوں پر 28 رنز درکار ہیں جبکہ اس کے چار بیٹسمین باقی ہیں۔