Got a TV Licence?

You need one to watch live TV on any channel or device, and BBC programmes on iPlayer. It’s the law.

Find out more
I don’t have a TV Licence.

لائیو رپورٹنگ

پیشکش: محمد صہیب اور اعظم خان

time_stated_uk

  1. بریکنگامید رکھیں، بانوے میں بھی یہی ہوا تھا!

    اب یہ پیج مزید اپ ڈیٹ نہیں کیا جائے گا۔

    سنہ 1992 کے ورلڈ کپ میں بھی انگلینڈ نے انڈیا کو ہرایا تھا جبکہ نیوزی لینڈ نے انگلینڈ کو باآسانی شکست دے دی تھی۔

    پاکستان اس وقت پوائنٹس ٹیبل پر پانچویں نمبر پر ہے اور سیمی فائنل تک رسائی کے لیے اسے نہ صرف بنگلہ دیش کو ہرانا ضروری ہے بلکہ یہ امید بھی کرنی ہے کہ نیوزی لینڈ تین جولائی کو انگلینڈ کو شکست دے دے۔

    دوسری صورت میں اگر انگلینڈ نیوزی لینڈ کو بہت بڑے مارجن سے اور پاکستان بنگلہ دیش کو بڑے مارجن سے ہرائے تو پاکستان نیوزی لینڈ کی جگہ سیمی فائنل کے لیے کوالیفائی کر لے گا۔

    پاکستان کا اگلا میچ بنگلہ دیش کے ساتھ پانچ جولائی کو ہے۔

    آخر میں اگر آپ یہ جاننا چاہتے ہیں کہ آپ کی پسندیدہ ٹیم کے سیمی فائنل میں پہنچنے کے کیا امکانات ہیں تو بی بی سی کے پریڈیکٹر سے فائدہ اٹھائیں یہ پریڈیکٹر ہماری ویب سائٹ بی بی سی اردو ڈاٹ کام پر موجود ہے۔

    پوانٹس
  2. بریکنگورلڈ کپ میں انڈیا کو پہلی شکست

    ناقابل شکست رہنے والی انڈین ٹیم کو آج میزبان ٹیم انگلینڈ سے پہلی شکست کا زائقہ چھکنا پڑا۔ انگلینڈ نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا اور مقررہ 50 اوورز میں 337 رنز بنائے۔

    انڈیا کے محمد شامی 5 وکٹیں لے کر انڈیا کے سب سے کامیاب بولر رہے۔ انڈیا کی طرف سے دوسری وکٹ کی شراکت میں کپتان ویراٹ کوہلی اور روہت شرما نے 138 رنز بنائے۔ کوہلی 66 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔

    شرما نے اپنی سنچری ضرور مکمل کی لیکن اس کے بعد وہ بھی فوراً آؤٹ ہوگئے۔ انڈین بلے باز انگلش بالرز کے سامنے بے بس نظر آئے اور مطلوبہ اوسط کا تعاقب کرنے میں ناکام رہے۔ یہی وجہ ہے کہ تجربہ کار بلے باز دھونی کے وکٹ پر ہوتے ہوئے انڈیا ہدف کا تعاقب نہ کرسکا۔

    مبصرین اور شائقین نے اس سست روی پر انڈین بلے بازوں پر کڑی تنقید بھی کی۔

    انگلینڈ
  3. بریکنگانگلینڈ کا بولنگ کارڈ

    انگلینڈ کی جانب سے لائم پلنکٹ کامیاب ترین بولر رہے۔ انھوں نے 10 اوورز میں 55 رنز دے کر تین کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔

    بی بی سی
  4. بریکنگبیئر سٹو میچ کے بہترین کھلاڑی

    بیئر سٹو کو 111 رنز کی عمدہ اننگز کھیلنے پر میچ کے بپترین کھلاڑی کا اعزاز دیا گیا۔

    بیئر سٹو نے 10 چوکے اور 6 چھکے لگا کر انگلینڈ کو ایک جارحانہ آغاز فراہم کیا۔

    بیئر سٹو کا کہنا ہے کہ ہم نے ایک اچھا ٹاس جیتا کیونکہ پچ بعد میں سست پڑ گئی تھی اور بلے بازی مشکل ہو گئی تھی۔

    بیئر سٹو نے جیسن رائے کے ساتھ مل کر 160 رنز کی عمدہ شراکت بنائی جس کے باعث انگلینڈ 337 رنز کا ٹوٹل بنانے میں کامیاب ہوا تھا۔

  5. انگلینڈ نے انڈیا کو 31 رنز سے شکست دے دی

    انڈیا کی ٹیم مقررہ پچاس اوورز میں پانچ وکٹوں کے نقصان پر 306 رنز ہی بنا سکی۔

  6. ناصر حسیین کی انڈیا کی بیٹنگ پر سخت تنقید

    ناصر حسین کا کہنا ہے کہ گراؤنڈ میں موجود تماشائیوں کے لیے ہی سہی، دھونی اور یادو کو جارحانہ انداز میں کھیلنا چاہیے۔

  7. انڈیا کو آخری اوور میں 44 رنز درکار

  8. بریکنگکیا انڈیا نیٹ رن ریٹ کو نقصان پہنچانے سے بچانا چاہتا ہے؟

    ایم ایس دھونی اور کیدر یادو نے پچھلے تین اوورز میں صرف ایک چوکا لگایا ہے اور صرف ایک ایک رن لے رہے ہیں جو کہ حیران کن ہے۔

    اس کی صرف ایک ہی وجہ سمجھ میں آتی ہے اور وہ یہ کہ انڈیا اپنا رن ریٹ بچا رہا ہے۔

  9. انڈیا کو آخری دو اوورز میں 51 رنز درکار

  10. انڈیا کو آخری تین اوورز میں 57 رنز درکار

  11. انڈیا کو میچ جیتنے کے لیے آخری چار اوورز میں 62 رنز درکار ہیں