Got a TV Licence?

You need one to watch live TV on any channel or device, and BBC programmes on iPlayer. It’s the law.

Find out more
I don’t have a TV Licence.

لائیو رپورٹنگ

پیشکش: عابد حسین اور محمد صہیب

time_stated_uk

  1. بریکنگانگلینڈ نے پہلا ورلڈ کپ جیت کر تاریخ رقم کر دی!

    یہ صفحہ اب مزید اپ ڈیٹ نہیں کیا جائے گا

    وہ ملک جہاں کرکٹ نے جنم لیا۔ وہ ملک جہاں پہلے تین ورلڈ کپ کھیلے گئے۔ وہ ملک جس نے پہلے پانچ ورلڈ کپپ میں سے تین کے فائنل تک رسائی حاصل کی مگر کبھی فتح کا تاج نہ پہنا۔ بالآخر 27 سال بعد انگلینڈ ورلڈ کپ کے فائنل میں پہنچا اور شومئی قمست، کے اپنے ہوم گراؤنڈ، جسے کرکٹ کا ہوم بھی کہا جاتا ہے، وہاں اپنا پہلا ورلڈ کپ جیت کر اوئن مورگن کی ٹیم نے نئی تاریخ رقم کر دی ہے۔ اتوار کے روز لارڈز کے میدان پر نیوزی لینڈ کے کپتان کین ولیمسن نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا تو انھوں نے مقررہ پچاس اوورز میں 241 رنز سکور بنائے۔ نیوزی لینڈ کے جانب سے ہینری نکولز نے سب سے زیادہ 55 رنز بنائے جبکہ لائم پلنکٹ اور کرس ووکس نے تین، تین کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔

    جواب میں انگلینڈ کی ٹیم بھی اس ٹوٹل کے تعاقب میں 241 رنز بنا کر اپنی اننگز کی آخری گیند پر آل آؤٹ ہو گئی۔ انگلینڈ کی جانب سے بین سٹوکس 84 اور جوز بٹلر 59 رنز بنا کر نمایاں رہے۔

    میچ ٹائی ہونے پر سپر اوور کروائے گئے۔ جس میں انگلینڈ نے پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے 15 رنز بنائے۔

    جواب میں حیران کن طور پر نیوزی لینڈ کی ٹیم بھی اپنے سپر اوور میں 15 رنز ہی بنا پائی اور آخری گیند پر مارٹن گپٹل دوسرا رن لیتے ہوئے آؤٹ ہو گئے۔

    قواعد کے مطابق آخر میں میچ کا فیصلہ دونوں ٹیموں کی جانب سے لگائی گئی باؤنڈریز کی تعداد پر کیا گیا۔

    انگلینڈ نے اپنی اننگزمیں 26 جبکہ نیوزی لینڈ نے 17 باؤنڈریز لگائی تھیں اور اس طرح سپر اوور ٹائی ہونے پر ورلڈ کپ انگلینڈ نے جیت لیا۔

    cricket
  2. ’آج دنیا آرچر کے قدموں میں ہے‘

    انگلینڈ کے کپتان اوئن مارگن اس موقع پر بہت خوش دکھائی دیے۔ یاد رہے کہ مارگن نے اپنے کریئر کا آغاز آئرلینڈ کی ٹیم کی نمائندگی سے کیا تھا۔

    ان کا ناصر حسین سے بات کرتے ہوئے کہنا تھا کہ ’میں کین ولیمسن سے تعزیت کرنا چاہوں گا۔ جس طرح سے ان کی ٹیم نے مقابلہ کیا اور جو جذبہ دکھایا۔

    میرے نزدیک یہ ایک بہت مشکل میچ تھا۔ ہم نے اپنے کھیل میں پچھلے چار سالوں میں بہت بہتری لائی ہے، خاص طور پر پچھلے دو سالوں میں۔‘

    ان کا کہنا تھا کہ آج جس طرح سے ہم نے میچ جیتا یہ ہمارے لیے بہت اہمیت رکھتا ہے۔ آج دونوں ٹیموں کے درمیان زیادہ فرق نہیں تھا اس لیے مجھے خوشی ہے کہ آج ٹرافی ہم اٹھا رہے ہیں۔

    ’میں سٹوکس، بٹلر کو پوراکریڈٹ دوں گا کے انھوں نے سپر اوور میں عمدہ کھیل پیش کیا اور ایک اچھا سکور بنایا اور پھر جوفرا آرچر نے جیسے یہ رن بچائے۔

    ’ان کے بارے میں میں یہی کہہ سکتا ہوں کہ آج دنیا جوفرا آرچر کے قدموں میں ہے۔‘

    cricket
    cricket
  3. بریکنگکین ولیمسن ٹورنامنٹ کے بہترین کھلاڑی قرار!

    کین ولیمسن 82 کی اوسط سے 578 رنز بنانے پر ٹورنامنٹ کے بہترین کھلاڑی قرار پائے۔ آج وہ صرف 30 رنز بنا سکے لیکن پورے ورلڈ کپ میں وہ نیوزی لینڈ کی بیٹنگ کی ریڑھ کی ہڈی ثابت ہوئے۔

    اس میچ میں بہت سارے ایسے موقع تھے جو دونوں جانب جا سکتے تھے۔

    انگلینڈ کو مبارک باد دینا چاہوں گا کیونکہ انھوں نے پورے میں بہت اچھا کھیل پیش کیا۔

    ہمارے لیے پورے ٹورنامنٹ میں مشکل پچوں پر بیٹنگ کرنا سب سے بڑا چیلنج تھا۔ ہم نے اس ٹورنامنٹ میں 300 سے زیادہ سکور کم ہی دیکھے ہیں۔

    میں نیوزی لینڈ کی پوری ٹیم کا شکریہ ادا کرتا ہوں کہ انھوں نے آخر تک مقابلہ کیا اور یہاں تک کہ فائنل بھی ٹائی پوا۔

    اس وقت تمام کھلاڑی بہت اداس اور دکھی ہیں۔ ظاہر ہے یہ ایک دل توڑنے والے لمحات ہیں لیکن مجھے ان سب پر فخر ہے کیونکہ انھوں نے اتنے بڑے پلیٹ فارم پر اتنی اچھی کارکردگی دکھائی۔

    cricket
  4. بریکنگبین سٹوکس میچ کے بہترین کھلاڑی قرار!

    بین سٹوکس 98 گیندوں 84 رنز کی شاندار اننگز کھیلنے پر میچ کے بہترین کھلاڑی قرار پائے۔

    انھوں نے اپنی اننگز میں پانچ چوکے اور دو چھکے لگائے۔

    میرے پاس الفاظ نہیں جن کے ذریعے میں اپنے جزبات بیان کر سکوں۔ آخری چار سالوں میں ہم نے جتنی بھی محنت کی وہ اس مقام تک پہنچنے کے لیے تھی۔

    اتنی اچھی کارکردگی اتنے بڑے میچ میں دکھانا ایک بہت بڑی بات تھی۔ مجھے نہیں لگتا ایسا میچ کرکٹ کی تاریخ میں کبھی کھیلا گیا ہو گا۔

    میں نے ان چار رنز کے بارے میں کین ولیمسن سے معذرت کی۔ میں نے یہ جان بوجھ کر نہیں کیا تھا۔

    سوپر اوور کے بارے میں بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ جوفرا آرچر میں بہت ٹیلنٹ ہے اس لیے ہم نے ان کو گیند تھمائی اور انھیں نے دنیا کو دکھا دیا کہ وہ کتنے بڑے بولر ہیں۔ اب میں آج رات کے جشن کے بارے میں پر جوش ہوں۔

    cricket
  5. ’میں نے کرکٹ میں سب کچھ دیکھ لیا‘

    میچ کے بعد انگلینڈ کے کھلاڑیوں نے بات کرتے ہوئے اپنے خیالات کا اظہار کیا۔

    جونی بیئر سٹو کا کہنا تھا کہ نیوزی لینڈ کے کھلاڑیوں کے ساتھ تعزیت کرتے ہیں کیونکہ اس میچ میں کبھی ایک ٹیم کا پلڑہ بھاری ہوتا تھا تو کبھی دوسری کا۔

    جیسے ہمارے کھلاڑیوں نے سپر اوور میں کھیلا وہ بہترین تھا۔ اور سٹوکس نے خاص طور پر عمدہ بیٹنگ کی۔ لارڈز میں کھیلنا ایک بات ہے لیکن لارڈ ز میں ورلڈ کپ کا فائنل جیتنا ایک بہت بڑی بات ہے۔

    جوس بٹلر کا کہنا ہے مجھے لگتا ہے کہ میں نے کرکٹ میں سب کچھ دیکھ لیا ہے اور یہ ایک انوکھا میچ تھا اس لیے اسے لفظوں میں بیان کرنا ممکن نہیں ہے۔ مجھے نہیں معلوم کہ آخر میں کیا ہوا مھے ابھی تک یقین نہیں آ رہا۔

    جو روٹ کا کہنا ہے کہ یہ بین سٹوکس کی قسمت میں لکھا تھا اور میں ان کے لیے بہت خوش ہوں۔

    cricket
  6. بریکنگانگلینڈ نے اپنا پہلا ورلڈ کپ جیت لیا!

    سپر اوور میں بھی میچ ٹائی ہونے کے باوجود انگلینڈ کے نام۔

    جوفرا آرچر کی گیند پر مارٹن گپٹل نے مڈ وکٹ کی جانب شاٹ ماری لیکن دوسرا رن لیتے ہوئے جیسن رائے کی زبردست تھرو جو سیدھے کیپر بٹلر کے پاس گئی اور انھوں نے مارٹن گپٹل کو رن آؤٹ کر دیا۔

    cricket
  7. بریکنگمورگن اور آرچر آپس میں بات کرتے ہوئے!

    کیا وہ شارٹ گیند کرائیں گے؟

    کرکٹ
  8. بریکنگاگر یہ میچ ٹائی ہوا تو انگلینڈ ورلڈ کپ جیت جائے گا!

  9. بریکنگورلڈ کپ کی آخری گیند، جیت کے لیے دو رنز درکار!

  10. بریکنگچوتھی گیند پر پھر سے دو رنز!

    دو گیندوں پر تین رنز درکار

  11. بریکنگتیسری گیند پر دو رنز!

  12. بریکنگنیشم کا شاندار چھکا!

    نیوزی لینڈ کو چار گیندوں پر سات رنز درکار۔

    cricket