’وھیل چئرپر بیٹھی تو خوشی سے آنسو نکل آئے‘
اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

ڈاکوؤں کے ہاتھ معذور ہو جانے والی باہمت ڈاکٹر اب دوسروں کے نفسیاتی مسائل حل کرتی ہیں۔

چہرے پر مستقل مسکراہٹ سجائے، نرم لہجے میں گفتگو کرنے والی ڈاکٹر انعم نجم مظفرآباد کے ہسپتال میں شعبۂ نفسیات میں مریضوں کی دیکھ بھال کر رہی ہیں۔ ان سے بات کر کے قطعی احساس نہیں ہوتا کہ اس نوجوان ڈاکٹر کا اپنی گردن سے نیچے کے جسم پر کوئی اختیار نہیں ہے۔

ڈاکٹر انعم میڈیکل کے تیسرے سال میں تھیں جب مارچ 2008 میں دوران سفر ڈاکوؤں کی گولی نے انھیں زندگی بھر کے لیے جسمانی طور پر معذور کر دیا۔

ڈاکٹر انم نجم کے ساتھ ہماری ساتھی تابندہ کوکب کی گفتگو۔