BBC Urdu

صفحۂ اول > سائنس

’سستے سمارٹ فونز کا زمانہ آنے والا ہے‘

فیس بُک ٹِوِٹر گوگل
14 جنوری 2013 17:42 PST
سمارٹ فون

نوکیا کے’آشا‘ نامی سمارٹ فون پریمیئم ہینڈ سٹ ’لومیا‘ کی فروخت میں اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔

واضح رہے کہ لومیا ونڈوز سسٹم پر چلنے والا سمارٹ فون ہے۔

نوکیا کے سہ ماہی نتیجے جمعرات کو شائع ہوئے جس کے مطابق سنہ دو ہزار بارہ کے آخری تین مہینوں میں مذکورہ دونوں قسم کے فون مجموعی طور پر ایک کروڑ چالیس لاکھ کی تعداد میں فروخت ہوئے جن میں سے لومیا کی تعداد چوالیس لاکھ رہی۔

ایسی اطلاعات بھی ہیں کہ ’ایپل‘ بھی کم قیمت والا ’آئی فون‘ بازار میں متعارف کروانے والا ہے۔

آئی ایچ ایس کے تجزیہ نگار ایان فوگ نے بی بی سی سے بات کرتے ہوئے کہا ’ہم اس بات کی پیشنگوئی کرتے ہیں کہ سنہ دو ہزار سولہ تک اکتیس فی صد ہینڈ سیٹ کم قیمت والے سمارٹ فون ہوں گے‘۔

انھوں نے کہا کہ ابتداء میں سمارٹ فون اعلیٰ قسم کے سمارٹ فون سے بہت مختلف ہوں گے۔

انھوں نے مزید کہا ’چھوٹے، سستے فون سیٹس میں دو تین سال پرانے پراسیسر ہوں گے، ان کی سکرین چھوٹی ہو گی، ان کا ریزولیوشن کم ہوگا، ان کے کیمرے نسبتاً کمزور ہوں گے، ان سے ای میل بھیجی جا سکے گی اور ان سے مختلف ویب سائٹس کو دیکھا جا سکتا ہے لیکن گیمنگ اور براؤزنگ کا جو بہتر تجربہ اعلیٰ قسم کے سمارٹ فون میں ہوگا وہ ان میں نہیں ہوگا۔

ایان فوگ نے کہا کہ ابھی بھی پریمیئم کوالٹی کے معاملے میں ایپل علیحدہ ہے۔ لیکن کیا آنے والے زمانے میں بھی ایسا رہے گا یا اسے بڑا کھلاڑی بن کر اس کی معیشت میں اپنا حصہ بنانا ہوگا۔

ان کے مطابق ایپل بہتر قسم کی مصنوعات بناتا ہے تاہم وہ سستی مصنوعات نہیں بناتا ہے

انھوں نے بتایا کہ آئی فون کے مختلف ورژن ہیں جیسے آئی فون فور، فور ایس اور فائیو اور ان کی قیمتیں مختلف ہیں۔

تجزیہ نگاروں کا کہنا ہے کہ صارفین کے لیے ان فونز کی کم قیمت کافی اہمیت کی حامل ہوگی۔

ان کے مطابق برطانیہ میں ابتدائی درجے کے سمارٹ فونز کی قیمت کم سے کم تیس پاؤنڈ ہوگی۔

ان کے ساتھ بُک مارک کریں

Email فیس بُک گوگل ٹِوِٹر