آخری وقت اشاعت:  منگل 7 دسمبر 2010 ,‭ 18:33 GMT 23:33 PST

خواجہ سراؤں کا شناخت کا جشن

میڈیا پلئیر

اس مواد کو دیکھنے/سننے کے لیے جاوا سکرپٹ آن اور تازہ ترین فلیش پلیئر نصب ہونا چاہئیے

ونڈوز میڈیا یا ریئل پلیئر میں دیکھیں/سنیں

پاکستان کے قومی ڈیٹا بیس ’نادرا‘ کے مطابق ہیجڑوں کے لیے جاری ہونے والے شناختی کارڈ میں ان کی جنس ’مُخنس‘ لکھی جائے گی اور اس ضمن میں وزارت قانون سے متعلقہ قانون میں ترمیم کی سفارش کی گئی ہے۔

نادرا کے مطابق سپریم کورٹ کی ہدایت پر اس نے اپنے سافٹ ویئر میں تبدیلی کردی ہے اور یکم جنوری سے ہیجڑوں کے لیے نئے شناختی کارڈ جاری کیے جائیں گے۔

نادرا کے نائب چئیرمین طارق ملک نے بتایا کہ عدالتی حکم کے بعد ہیجڑوں کی تنظیموں کے نمائندوں سے بات چیت کے بعد طے پایا ہے کہ آئندہ ان کی جنس ‘مُخنس’ لکھی جائے گی۔ لیکن ان کے مطابق جو مرد ہیجڑا ہوگا انہیں‘خواجہ سرا’ جبکہ خاتون ہیجڑے کا ‘زنخا’ کے طور پر اندارج ہوگا۔

[an error occurred while processing this directive]

BBC navigation

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔