آخری وقت اشاعت:  بدھ 12 جنوری 2011 ,‭ 17:44 GMT 22:44 PST

نودریافت ستارے اور سیارے

میڈیا پلئیر

اس مواد کو دیکھنے/سننے کے لیے جاوا سکرپٹ آن اور تازہ ترین فلیش پلیئر نصب ہونا چاہئیے

ونڈوز میڈیا یا ریئل پلیئر میں دیکھیں/سنیں

یورپی فلکیات داں خلاء میں لاکھوں میل کے فاصلے پر نت نئے ستارے، سیارے اور فلکی اجسام دیکھ کر ششدر رہ گئے ہیں۔

ان فلکیات دانوں کے بقول یہ نئی دریافتیں ہیں جو پلینک نامی خلائی دوربین کی بدولت سامنے آئی ہیں۔ فلکی دوربین زمین سے دس لاکھ کلومیٹر کے فاصلے خلاء میں نصب کی گئی ہے۔

اب تک اس دوربین کے ذریعے پندرہ ہزار نئے فلکی اجسام دریافت کیے گئے ہیں۔

نودریافت فلکی اجسام میں کہکشاؤں کے کئی جھرمٹ اور کئی ایسے سیارے بھی ہیں جن کے بارے میں کہا جارہا ہے کہ وہ حجم میں اب تک دیکھے گئے تمام سیاروں سے کہیں بڑے ہیں۔

[an error occurred while processing this directive]

BBC navigation

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔