اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

کونن کے باشندے انصاف کے منتظر

ھارت کے زیر انتظام کشمیر میں حال میں حقوق انسانی کے ریاستی کمیشن نے بیس برس کے وقفے کے بعد یہ اعتراف کیا کہ کہ فرووری 1991 میں کپواڑہ ضلع کے کونن پوشہ پورہ گاؤں میں بھارتی فوجیوں نے اجتماعی جنسی ویادتی کا ارتکاب کیا تھا ۔ بھارتی حکومت اور فوج اس سنگین واقع کی تردید کرتی رہی ہیں ۔ حقوق انسانی کے کمیشن نے تیس سے زیادہ خواتین اور لڑکیوں کے ساتھ جنسی زیادتی کا مقدمہ درج کرنے اور اس واقعہ کی مکمل تفتیش کی سفارش کی ہے ۔لیکن کیا کونن کے باشندوں کو کبھی انصاف مل سکے گا ۔ پیش ہے کونن پوشپورہ سے ہمارے نامہ نگار شکیل اختر کی کی یہ خصوصی رپورٹ ۔