اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

’نیا قانون ایک تاخیری حربہ‘

پاکستان کی سپریم کورٹ کے سابق جج جسٹس ریٹائرڈ طارق محمود نے توہینِ عدالت کے نئے قانون کو حکومت کا تاخیری حربہ قرار دیا ہے۔

بی بی سی اردو کے ظہیرالدین بابر سے بات چیت میں انہوں نے کہا کہ اس قانون سے عوامی عہدایداروں کو (توہینِ عدالت سے) مکمل چھوٹ نہیں ملے گی لیکن اگر یہ قانون اسی طرح برقرار رہا تو حکومت، (سپریم کورٹ میں جاری معاملات) کو کامیابی کے ساتھ مؤخر کر لے گی۔

انہوں نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ توہینِ عدالت کے قانون کو سپریم کورٹ میں چیلنج کرنے کے لیے دخواستیں تیار ہو چکی ہوں گی۔