افغانستان: وہیل چیئر باسکٹ بال ٹورنامنٹ

آخری وقت اشاعت:  ہفتہ 1 ستمبر 2012 ,‭ 23:15 GMT 04:15 PST
  • افغانستان میں بین الاقوامی تنظیم انٹرنیشنل کمیٹی آف ریڈ کراس نے ملک کی تاریخ میں پہلا وہیل چیئر پر باسکٹ بال ٹورنامنٹ منعقد کرایا۔
  • ٹورنامنٹ میں حصہ لینے والے کھلاڑیوں میں سے بیشتر نے پہلے باسکٹ بال نہیں کھیلا تھا۔ نیو یارک کے علاقے بروکلن سے جیس مرکٹ نے ٹورنامنٹ شروع ہونے سے قبل کھیل کے قواعد و ضوابط کھلاڑیوں کو بتائے۔
  • جیس افغانستان میں کھلاڑیوں کی تربیت 2009 سے کر رہے ہیں۔ جیس نیو یارک کی ٹیم رولنگ نکس کی جانب سے کھیلتے ہیں۔
  • جیس کا کہنا ہے ’میں جب پہلی بار ان کو باسکٹ بال کورٹ میں لے کر گیا تو یہ لوگ گھبرا گئے۔ وہ سوچ رہے تھے کہ دو سال قبل وہ اپنے مکان سے بھی باہر نہیں نکلتے تھے اور اب وہ ہجوم کے سامنے باسکٹ بال کھیلیں گے۔‘
  • اس ٹورنامنٹ میں آٹھ ٹیموں نے حصہ لیا۔ چار ٹیمیں کابل سے، دو مزار شریف سے، ایک ہرات اور میمانا سے۔
  • ہر ٹیم میں پانچ کھلاڑی تھے۔ ان میں سے تین کورٹ میں کھیل رہے تھے اور دو ریزرو میں تھے۔
  • آس پاس سے گزرتے لوگوں اور ریڈ کراس کے آرتھوپیڈک سینٹر کے مریضوں نے یہ ٹورنامنٹ دیکھا۔
  • برطانوی شہر برسٹل میں امدادی تنظیم موٹیویشن نے ایک سو بیس وہیل چیئرز فراہم کیں۔
  • یہ ٹورنامنٹ میمانا کی ٹیم نے جیتا۔ ٹورنامنٹ میں حصہ لینے والے کھلاڑی نیشنل لیگ بنانا چاہتے ہیں اور خواہش ہے کہ وہ برازیل میں 2016 میں ہونے والے پیرالمپکس کھیلوں میں حصہ لیں۔
  • یہ تمام تصویریں ڈیوڈ کونسٹنٹین نے کھینچی ہیں۔ جب وہ اکیس سال کے تھے تو آسٹریلیا میں ایک ٹریفک حادثے میں ان کی گردن ٹوٹ گئی۔ وہ اب وہیل چیئر پر ہیں۔ ان کا کیمرہ ان کی وہیل چیئر کے ساتھ ایک خاص آلے کے ساتھ نصب ہے۔

ملٹی میڈیا

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔