اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

حقانی نیٹ ورک یا امریکہ

امریکی وزیر خارجہ ہیلری کلنٹن نے پاکستان میں سرگرم شدت پسند گروپ حقانی نیٹ ورک کو دہشتگرد گروہ قرار دینے کی منظوری دے دی ہے۔ امریکی وزیر خارجہ کی منظوری کے بعد یہ سفارش امریکی پارلیمنٹ کے سامنے پیش کی جائے گی جو پہلے ہی اس گروپ کو دہشتگرد قرار دینے کے حق میں رائے دے چکی ہے۔

امریکہ کی جانب سے دہشتگرد قرار دیے جانے کے بعد حقانی نیٹ ورک اور اس سے متعلق لوگوں کے خلاف مالی پابندیاں عائد کی جا سکیں گی۔ پاکستان کے سرحدی علاقوں سے کام کرنے والے اس گروہ پر افغانستان میں دہشتگرد حملوں کے الزام لگتے رہے ہیں۔

خاص طور پر کابل میں گزشتہ کچھ عرصے میں ہونے والے بڑے حملوں میں اسی گروہ کو ملوث قرار دیا جاتا ہے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ دہشت گرد گروہ قرار دیے جانے کے بعد پاکستان اور امریکہ دونوں ہی سفارتی طور پر مشکل صورتحال سے دوچار ہو سکتے ہیں۔ جہاں امریکہ کو پاکستان سے حاصل ہونے والے تعاون کے کم ہونے کا خطرہ ہے، وہیں پاکستانی مبصرین کا خیال ہے کہ پاکستان کو بھی اب امریکہ یا حقانی نیٹ ورک میں سے کسی ایک کا انتخاب کرنا ہو گا۔

پشاور سے عزیزاللہ خان کی رپورٹ۔