برطانوی وائلڈ لائف فوٹوگرافی ایوارڈز کے فاتح

آخری وقت اشاعت:  جمعرات 13 ستمبر 2012 ,‭ 13:53 GMT 18:53 PST
  • برطانوی وائلڈ لائف ایوارڈز میں اس سال فوٹوگرافروں کی جانب سے ایسی تصاویر بھیجی گئیں جن میں برطانیہ میں موجود جنگلی حیات میں تنوع کی ایک ایسی جھلک دیکھنے کو ملی جو پہلے کبھی نہیں دیکھی گئی۔ یہ تصویر جس کا موضوع تھا ’گینیٹ جکوزی‘ مجموعی طور پر فاتح رہی جسے ڈاکٹر میٹ ڈوگیٹ نے مقابلے میں جمع کروایا۔ وہ کہتے ہیں ’مجھے یہ تصویر پسند ہے کیوں کہ اس میں ان کی حرکات کے ہر مرحلے کو بند کر لیا گیا ہے۔‘
  • ہائی سپیڈ یعنی تیز رفتار فوٹوگرافی کے ماہر ڈیل سٹن نے ’چھپے ہوئے برطانیہ‘ کے زمرے میں یہ تصویر جمع کروائی اور ایوارڈ بھی جیتا۔ اس تصویر کا موضوع تھا ’لِیپ فور فریڈم‘ یعنی آزادی کے لیے چھلانگ۔ اس تصویر میں چھلانگ مارتا ہوا ایک کرکٹ دکھایا گیا ہے۔ ڈیل سٹن کہتے ہیں ’ ہم ٹڈیوں اور کرکٹ کو گھاس میں بیٹھا تو دیکھتے ہیں لیکن ایک مرتبہ وہ ہل جائیں تو نہیں دیکھ پاتے‘۔
  • اس تصویر نے جانوروں کے رویے کے زمرے میں ایوارڈ حاصل کیا۔ اس تصویر میں ایک ہیرنگ گل نے بحری پرندے کو اٹھایا ہوا ہے۔ یہ تصویر ایمینڈا ہیز نے کھینچی۔ انہوں نے کہا ’مجھے نہیں معلوم کہ کس کا دل زیادہ تیزی سے دھڑک رہا تھا، میرا یا پفن کا۔‘
  • شہری علاقوں میں جنگلی حیات کے زمرے میں اس تصویر نے ایوارڈ جیتا۔ اس تصویر کا موضوع تھا ’سٹارلنگز واچنگ سٹارلنگز‘۔ یہ تصویر فل جونز نے کھینچی جن کا کہنا تھا ’میں کچھ مختلف کرنا چاہتا تھا اس لیے میں نے ان پرندوں پر غور کیا جو ایک ٹہنی پر بیٹھے سمندر کی جانب پرندوں کے ایک دوسرے جھنڈ کو دیکھ رہے تھے۔‘
  • اس تصویر نے جانوروں کی تصاویر کے زمرے میں ایوارڈ حاصل کیا۔ اس تصویر کے فوٹوگرافر نیل میک انٹائر کا کہنا ہے کہ ’کئی مرتبہ ناکامی کے بعد آخر کار ایک بارہ سنگھا ہرن بہترین پوزیشن میں آکر کھڑا ہوا اور میں نے یہ تصویر کھینچ لی‘۔
  • فوٹوگرافر الیکسینڈر مسٹرڈ کا کہنا ہے کہ ’میں نے ایک سیل (دریائی بچھڑا) کو اس رنگا رنگ غار سے گزرتے دیکھا اور اس کا طویل انتظار کیا‘ اور ان کے صبر کا پھل انہیں اس تصویر کے نتیجے میں ملا جس نے قدرتی ٹھکانوں کے زمرے میں ایوارڈ جیتا۔
  • رات کے وقت لی گئی اس تصویر میں دکھایا گیا ہے کہ کس طرح ایک سڑک جانوروں کے مخصوص قدرتی ٹھکانے کے بیچ میں سے گزر رہی ہے۔ اس تصویر کے فوٹوگرافر سٹیفن پاؤل کا کہنا ہے کہ ہرن کی تصویر والے اس سائن پوسٹ سے پتہ چلستا ہے کہ کس طرح جانوروں کے اس قدرتی ٹھکانے سے سڑک گزاری گئی ہے۔
  • ’وائلڈ لائف ان مائی بیک یارڈ‘ یعنی گھر کے عقبی صحن میں جنگلی حیات کے زمرے میں ڈیوڈ ہینڈلے کے اس تصویر نے ایوارڈ جیتا۔ ان کا کہنا ہے کہ یہ تصویر کھینچنا ایک چیلنج تھا۔ ’گھونسلہ دیوار کے اوپر تھا اس لیے مجھے ایک چھوٹی سیڑھی کا استعمال کرنا پڑا۔‘
  • نیو فاریسٹ میں خزاں کے موسم کی ایک سہ پہر کے اس منظر کی تصویر جیریمی والکر نے کھینچی اور ’وائلڈ ووڈز‘ کے زمرے میں ایوارڈ جیتا۔ ان تصاویر کی نمائش 17 سے 22 ستمبر تک لندن کی مال گیلیریز میں ہو گی جس کے بعد انہیں ملک کے مختلف حصوں میں بھی نمائش کے لیے پیش کیا جائے گا۔

ملٹی میڈیا

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔