پاکستان: توہین آمیز فلم کے خلاف مظاہرے

آخری وقت اشاعت:  پير 17 ستمبر 2012 ,‭ 22:32 GMT 03:32 PST

پاکستان کے مختلف شہروں میں اتوار کے روز امریکہ میں پیغمبرِ اسلام پر متنازع فلم کے خلاف مظاہرے کیے گئے۔

  • پاکستان کے مختلف شہروں میں پیغمبرِ اسلام پر متنازع فلم کے خلاف مظاہرے منعقد کیے گئے۔ دارالحکومت اسلام آباد میں بھی ایک ریلی نکالی گئی
  • کراچی میں پیغمبرِ اسلام پر متنازع فلم کے خلاف ایک ریلی نکالی گئی جس کے شرکاء کو منتشر کرنے کے لیے پولیس نے شیلنگ اور ہوائی فائرنگ کی
  • اس موقع پر پولیس نے واٹر کینن اور آنسو گیس کا استعمال بھی کیا
  • کراچی میں بی بی سی کے نامہ نگار ارمان صابر نے بتایا کہ مجلسِ وحدت المسلمین کے ترجمان علی احمد کا کہنا تھا کہ گستاخانہ فلم کے خلاف یہ ریلی پرامن تھی۔۔۔ اور ریلی کا مقصد امریکی قونصلیٹ کے سامنے اپنا احتجاج ریکارڈ کرانا تھا لیکن پولیس نے اس ریلی پر شیلنگ اور ہوائی فائرنگ کر کے ریلی کے شرکاء کو مشتعل کردیا اور اس کی تمام تر ذمہ داری پولیس پر عائد ہوتی ہے
  • پولیس کی کارروائی کے نتیجے میں ایک شخص ہلاک ہوگیا جبکہ پولیس چوکی کو بھی نذرآتش کردیا گیا
  • لاہور میں بھی احتجاجی ریلی نکالی گئی جس میں شرکاء بینرز اور پلے کارڈز اٹھائے ہوئے تھے جن میں گستاخانہ فلم بنانے والوں کے خلاف نعرے بازی کی گئی تھی
  • لاہور میں نکالی جانے والی ریلی سے جماعت الدعوہ کے سربراہ حافظ سعید نے بھی خطاب کیا
  • پاکستان کے دیگر شہروں میں بھی مظاہرے کیے گئے۔ یہاں ملتان میں ہونے والا احتجاجی مظاہرہ دیکھایا گیا ہے

ملٹی میڈیا

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔