جنگلی حیات میں سال کے بہترین فوٹوگرافر

آخری وقت اشاعت:  جمعرات 18 اکتوبر 2012 ,‭ 15:32 GMT 20:32 PST
  • ماحولیات سے متعلق ویولیا وائلڈ لائف یا جنگلی حیات کے فوٹوگرافس میں کینیڈا کے پال نیکلن نے اپنی تصویر ببل جیٹگ ایمپرر پر سال کے بہترین فوٹوگرافر کا انعام جیتا۔ وہ انٹارکٹیکا کے ’روز سمندر‘ میں ایمپرر پینگوئن کالونی میں ان پینگوئن کی تصاویر حاصل کرنے کے لیے منجمد پانی میں کوئی حرکت کیے بغیر کافی دیر تک کھڑے رہے۔
  • کم عمر فوٹو گرافرز کا جونئیر انعام مجموعی طور پر بیڈ فورڈ شائر کے چودہ سالہ اوون ہیرن نے تصویر’ فلائٹ پاتھس‘یا اڑان کے راستوں پر حاصل کیا۔ اسی جگہ پر سنہ انیس سو ساٹھ میں لندن کا تیسرا ہوائی اڈے کا منصوبہ بنایا گیا تھا اور اس کی تعمیر کے خلاف احتجاج بھی کیا گیا۔
  • امریکہ کے سٹیو ونٹر نے وائلڈ لائف جرنلسٹ کا ایواڈ جیتا۔ چیتے کی یہ نسل بہت ہی نایاب ہو گئی ہے اور اس وقت دنیا میں ان کی تعداد چار سے پانچ سو کے قریب ہے اور خاص طور پر سوماٹرا کے جنگلات میں اس نسل کی بقا کو شدید خطرہ لاحق ہے۔ سٹیو نے ایک خودکار یا آٹو ٹریپ کیمرے کے ذریعے یہ تصویر حاصل کی، اس جنگل میں پہلے چیتے کا شکار کرنے والے اور اب اس جنگی پارک میں رینجرز گارڈ کی ڈیوٹی کرنے والے ایک اہلکار نے سٹیو ونٹر کو بتایا کہ کس جگہ پر کیمرے کو نصب کرنا ہے۔
  • کریبئن میں ہزاروں کی تعداد میں لال سر والے یہ پرندے فلیمنگوز، جو پرندوں کی اس نسل میں سب سے زیادہ گلابی ہیں اور یہ ہر سال سردیوں میں میکسکیو کے جزیرہ نما علاقے یوکیٹن کا رخ کرتے ہیں۔ جرمنی کے کلاؤس ناگئی نے ہوائی جہاز کے دروازے میں کھڑے میں کر یہ تصویر حاصل کی۔
  • برطانیہ کی اینا ہنلے نے سوالبارڈ میں کشتی سے برفانی ریچھ کی تصویر حاصل کی۔ برفانی ریچھ برف کے ٹکڑوں پر چل رہا ہے جس سے گلوبل ورامنگ کے سمندری برف پر اثر انداز ہونے کا اندازہ لگایا جا سکتا ہے اور یہ برف اس نسل کے ریچھوں کی بقاء کے لیے بہت اہم ہے۔
  • گریگواری بوگرو فرانس کے گریگواری برگرو نے دودھ دینے والے جانوروں کی درجہ بندی میں انعام حاصل کیا ہے۔ اس تصویر میں چیتوں کے بچے ایک ہرن کے ایک بچے کا تعاقب کر رہے ہیں۔ اس سے پہلے انہوں نے کمسن ہرن کی ماں کو پکڑا لیکن اسے مارا نہیں، اس موقع پر چیتوں کے بچوں نے زمین پر لیٹے اس کمسن ہرن کی طرف توجہ نہیں دی لیکن جیسے ہی اس نے اپنی ٹانگوں پر کھڑا ہو کر جانے کی کوشش کی تو چیتوں کے بچے اس کی طرف متوجہ ہوئے اور ان کی شکار خور حس جاگ اٹھی۔
  • کینیڈا کے بینف نیشنل پارک کی پیٹو لیک کی اس تصویر کو حاصل کرنے کے لیے روس کے فوٹوگرافر ویلادمیر میدویو کو برف باری کے موسم کے دوران خاصی محنت کرنا پڑی کیونکہ برف باری کے دوران روشنی جھیل میں جذب ہوجاتی ہے جسے یہاں ’گلیئیشر ملک‘ کہتے ہیں اور مناسب روشنی کا انتظار کرنا پڑتا ہے۔
  • جنوبی افریقہ کے کم ولیٹر نے جیرالڈ ڈیرل نے معدوم ہوتی جنگلی حیات یا خطرے سے دوچار جنگلی حیات کی درجہ بندی میں انعام حاصل کیا۔ کم نے زمبابوے میں جنگلی حیات کے لیے محفوظ قرار دیے جانے والے علاقے میں چار سال سے زیادہ کا عرصہ گزارا اور آوارہ کتوں کی عکس بندی کی۔ کم کے مطابق انہوں نے ان کتوں کے ساتھ سفر کیا اور جب یہ شکار کرتے تو ان کے ساتھ دوڑ بھی لگانی پڑتی۔
  • ایوو نے لندن میں پانی میں تیرتے اس پرندے کی تصویر کھینچی اور پانی کی سطح پر لہروں کی غیر معمولی شکل دیکھی جا سکتی ہے، ایوو کے مطابق لندن کے تجارتی مرکز کینری وارف میں بلند و بالا عمارتوں کے پانی پر عکس پڑنے کی وجہ سے لہریں اس شکل میں نظر آتی ہیں۔

ملٹی میڈیا

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔