ملالہ کی حالت بہتر، صحت یابی کی تقریبات

آخری وقت اشاعت:  جمعـء 19 اکتوبر 2012 ,‭ 15:34 GMT 20:34 PST
  • پاکستان میں طالبان کی گولی کا نشانہ بننے والی طالبہ ملالہ یوسفزئی کے معالجوں کا کہنا ہے کہ ملالہ لکھ کر بات کر رہی ہیں اور سہارا لے کر کھڑے ہونے کے قابل ہو گئی ہیں۔
  • برمنگھم کے کوئین الزبتھ ہسپتال کے میڈیکل ڈائریکٹر ڈاکٹر ڈیو روسر نے کہا ہے کہ ’ملالہ سہارے سے کھڑے ہونے کے قابل ہو گئی ہے لیکن اب بھی انفیکشن کی علامت موجود ہے‘۔
  • ملالہ یوسفزئی کو علاج کے لیے پیر کو پاکستان سے برطانیہ منتقل کیا گیا تھا اور انہیں برطانوی شہر برمنگھم کے کوئین الزبتھ ہسپتال لایا گیا جو جنگ میں زخمی ہونے والے فوجیوں کے علاج کے لیے شہرت رکھتا ہے۔
  • ملالہ کی صحت کے بارے میں نہ صرف پاکستان میں بلکہ بیرون ملک بھی خاصی تشویش پائی جاتی ہے۔ ہانگ کانگ میں ملالہ سے اظہار یکجہتی کا ایک انداز۔
  • پاکستان بھر ملالہ کی صحت یابی اور ان سے اظہار یکجہتی کےلیے خصوصی تقریبات کا سلسلہ جاری ہے۔
  • لاہور کے ایک سکول میں ملالہ کی صحت یابی کے حوالے سے منعقدہ ایک تقریب۔
  • جمعرات کو خواتین کی دو تنظیمیں جمعرات کو ملالہ سے اظہار یکجہتی کے لیے برمنگھم کونسل ہال کے باہر شمعیں روشن کیں۔
  • ہسپتال کی ویب سائٹ پر ملالہ کے لیے پیغامات کا جو صفحہ بنایا گیا ہے اس پر دنیا بھر سے ایک ہی رات میں ڈیڑھ ہزار سے زیادہ پیغامات موصول ہوئے ہیں اور اعلامیے کے مطابق یہ سلسلہ ابھی جاری ہے۔
  • اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ ہسپتال کی انتظامیہ ملالہ کے لیے کارڈز اور تحائف وصول کرنے سے قاصر ہے لیکن یہ چیزیں برمنگھم کونسل ہال بھیجے جا سکتے ہیں۔

ملٹی میڈیا

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔