ہیٹی میں ہیضہ کی ذمہ دار اقوام متحدہ کی فوج

آخری وقت اشاعت:  پير 22 اکتوبر 2012 ,‭ 16:21 GMT 21:21 PST

میڈیا پلئیر

ہیٹی میں ہیضہ امن فوج نے پھیلایا

دیکھئیےmp4

اس مواد کو دیکھنے/سننے کے لیے جاوا سکرپٹ آن اور تازہ ترین فلیش پلیئر نصب ہونا چاہئیے

متبادل میڈیا پلیئر چلائیں

ايک نئی سائنسي تحقيق کے مطابق دو سال پہلے ہيٹي ميں ہيضہ کي وباء لانے کي ذمہ دار اقوام متحدہ کي امن فوج تھی۔اس فوج ميں شامل کئي فوجي نيپال سے تھے اور اس تحقيق سے پتا چلا ہے کہ ہیضہ کی جو قسم ہيٹی میں داخل ہوئی وہی نيپال ميں پائی جاتي ہے۔ بي بي سي کے نامہ نگار مارک ڈؤيل کي رپورٹ پيش کر رہی ہیں مہوش حسين

ملٹی میڈیا

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔