پہاڑی گوریلوں کی افزائش نسل میں نمایاں کامیابی

آخری وقت اشاعت:  منگل 27 نومبر 2012 ,‭ 16:58 GMT 21:58 PST
  • یوگینڈا کے وائلڈ لائف انتظامیہ کے جاری کردہ اعدادوشمار کے مطابق پوری دنیا میں پہاڑی گوریلوں کی آبادی اب آٹھ سو اسی تک جا پہنچی ہے۔
  • پہاڑی گوریلے مشرقی گوریلوں کی ایک قسم ہیں اور یہ دنیا میں صرف جمہوریہ کانگو کے جنگلات اور دوسرا یوگینڈا کے بوینڈی نیشنل پارک میں پائے جاتے ہیں۔
  • ورلڈ وائلڈ لائف فیڈریشن کے ’گریٹ ایپ پروگرام‘ کے ڈیوڈ گریئر کے مطابق ’پہاڑی گوریلے واحد گوریلے ہیں جن کی آبادی بڑھ رہی ہے جس کی وجہ ان کی افزائش کے لیے کیےگئے اقدامات ہیں۔
  • ان گوریلوں کی آبادی کو حالیہ بڑا خطرہ شکاریوں کے پھندوں سے ہیں۔
  • ان علاقوں میں گشت کرنے والے محافظوں کے لیےایک تربیتی پروگرام شروع کیاگیا ہے جس میں انہیں سکھایا جاتا ہے کہ وہ پھندے کیسے پہچان کر ہٹا سکتے ہیں۔
  • ورلڈ وائلڈ لائف فیڈریشن کے ’گریٹ ایپ پروگرام‘ کے ڈیوڈ گریئر کے مطابق رواں سال کم از کم سات گوریلے ان پھندوں میں پھنسے ہیں جن میں سے دو زندہ بچ نہیں پائے۔
  • ورلڈ وائلڈ لائف فنڈ کے مطابق ’گزشتہ سو سالوں میں جب سے ان گوریلوں کو دریافت کیاگیا ہے تب سے ان کو بہت زیادہ خطرات کا سامنا کرنا پڑا ہے جن میں بیماری، شکار، جنگیں، ان کے رہائش کے علاقوں میں جنگلات کی کٹائی اور غیر قانونی سمگلنگ شامل ہیں۔
  • افزائش نسل کے منصوبوں کی بدولت ان گوریلوں کی آبادی انیس سو نواسی میں چھ سو بیس سے بڑھ کر موجودہ تعداد آٹھ سو اسی تک پہنچ گئی ہے۔
  • گوریلے بہت سماجی قسم کے جانور ہیں اور گروہوں کی شکل میں رہتے ہیں۔ ان گوریلوں کی گنتی سے پتا چلا ہے کہ بویندی نیشنل پارک میں چار سو پہاڑی گوریلے رہتے ہیں جو چھتیس نمایاں گروہوں اور سولہ نروں پر مشتمل ہیں۔
  • بویندی میں ہونے والی گنتی یوگینڈا کی جنگلی حیات کے شعبے نے روانڈا کے قدرتی حیات کی افزائش کے انسٹیٹیوٹ کی مدد سے کی تھی۔

ملٹی میڈیا

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔