شدت پسندی کے خلاف سرگرم عرفان علی

آخری وقت اشاعت:  ہفتہ 12 جنوری 2013 ,‭ 00:51 GMT 05:51 PST

میڈیا پلئیر

عرفان علی جنہیں لوگ ان کے ٹوئٹر ہینڈل ’خودی علی‘ کے نام سے جانتے تھے کوئٹہ میں ہونے والے دھماکے میں ہلاک ہو گئے۔

دیکھئیےmp4

اس مواد کو دیکھنے/سننے کے لیے جاوا سکرپٹ آن اور تازہ ترین فلیش پلیئر نصب ہونا چاہئیے

متبادل میڈیا پلیئر چلائیں

عرفان علی جنہیں لوگ ان کے ٹوئٹر ہینڈل ’خودی علی‘ کے نام سے جانتے تھے کوئٹہ میں ہونے والے دھماکے میں ہلاک ہو گئے۔

چند ماہ پہلے کراچی میں سوشل میڈیا کے حوالے سے منعقدہ ایک تقریب میں بی بی سی سے بات کی۔ اس وقت بھی انہوں نے کہا تھا کہ بلوچستان میں شعیہ ہزارہ برادری کو درپیش سکیورٹی کے مسئلے کو قومی سطح پر نظر انداز کیا جا رہا لیکن وہ سوشل میڈیا کے ذریعے اس مسئلے پر توجہ دلانے کی کوششیں جاری رکھیں گے۔

ملٹی میڈیا

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔