ہیڈلی سزا: ’امریکہ پر بہت بھروسہ کیا‘

آخری وقت اشاعت:  جمعـء 25 جنوری 2013 ,‭ 18:09 GMT 23:09 PST

میڈیا پلئیر

بھارتی حکومت نے امریکی عدالت کی جانب سے ممبئی حملوں کی سازش کرنے کے جرم میں اپنے شہری ڈیوڈ ہیڈلی کو پینتیس برس کی سزا دیے جانے پر مایوسی ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ سزا بہت کم ہے اور انہیں موت کی سزا ملنی چاہیے تھی۔

سنئیےmp3

اس مواد کو دیکھنے/سننے کے لیے جاوا سکرپٹ آن اور تازہ ترین فلیش پلیئر نصب ہونا چاہئیے

متبادل میڈیا پلیئر چلائیں

بھارتی حکومت نے امریکی عدالت کی جانب سے ممبئی حملوں کی سازش کرنے کے جرم میں اپنے شہری ڈیوڈ ہیڈلی کو پینتیس برس کی سزا دیے جانے پر مایوسی ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ سزا بہت کم ہے اور انہیں موت کی سزا ملنی چاہیے تھی۔

لیکن دوسری جانب، حال ہی میں دلی میں ہونے والے ریپ کے نتیجے میں خاتون کی موت کے واقعے پر سابقہ ججوں کے ایک کمیشن نے ملزمان کے لیے موت کی سزا کے مطالبے کو مسترد کرتے ہوئے عمر قید یا طویل مدتی قید تجویز کی۔ کیا اس متضاد حکومتی رویے کو دوہرہ معیار گردانیں، بھارت کی اندرونی سیاست اور اس کے بین الاقوامی تعلقات کے مابین کشمکش یا کچھ اور۔ اس بارے میں ہمارے ساتھی امان اظہر نے بات کی بھارت میں جواہر لعل نہرو یونیورسٹی کے شعبہ بین الاقوامی تعلقات کے سابق ڈین پش پیش پنت سے بات کی۔

ملٹی میڈیا

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔