جمعہ انتیس مارچ کا سیربین

جمعہ انتیس مارچ کو نشر ہونے والے بی بی سی اردو سروس کے ٹی وی پروگرام سیربین کے چاروں حصے آپ اس صفحہ پر دیکھ سکتے ہیں۔ یہ پروگرام ایکسپریس نیوز پر نشر کیا گیا تھا۔

سیربین ہفتے میں تین دن یعنی پیر، بدھ اور جمعے کو پاکستان کے مقامی وقت کے مطابق رات گیارہ بجے ایکسپریس نیوز پر نشر ہوتا ہے۔

فاٹا کے پناہ گزین ووٹ کیسے دیں گے؟

پاکستان ميں انتخابات کي تيارياں زوروں پر ہيں۔ ليکن قبائلی علاقوں خیبر، اورکزئی، جنوبی وزیرستان، کُرم، مُہمند اور باجوڑ ایجنسیوں سے خراب حالات کے باعث لاکھوں لوگ گھر چھوڑ کر جا چکے ہيں۔ ووٹ دينے کي خواہش تو ان کي بھي ہے ليکن اب شايد ايسا ممکن نہيں اور يہ لوگ انتخابي تماشا صرف دور سے ہي ديکھ رہے ہيں۔ اس وقت تقريباً ساڑھے سات لاکھ افراد پناہ گزین کیمپوں میں رہائش پذیر ہیں۔ الیکشن کمیشن کی طرف سے ان متاثرین کے ووٹ کے ليے اقدامات کے دعوے تو کيے گئے ہیں لیکن حقيقت اس کے برعکس ہے۔

تفصيل کے ساتھ رفعت اللہ اورکزئی

اس حصے کے آخر میں شامل ہیں آپ کی جانب سے سوشل میڈیا پر آنے والی آراء۔

سری لنکا میں بودھ مسلم فسادات

سری لنکا میں مسلم مخالف کارروائیوں میں اچانک اِضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔ اور حیرت کی بات یہ ہے کہ اِس کے پیچھے بودھ بھِکشوؤں کا ہاتھ ہے۔ پہلے مسلمانوں کے حلال کھانے پر اعتراض ہوا، پھر کہا گیا کہ اُن سے مال نہ خریدا جائے اور اب ایک مسلمان تاجر کے گودام پر حملہ کیا گیا ہے۔ تفصيل سنيے عارف شميم سے

موسيقي کي دنيا سے ديکھتے ہيں میڈم نور جہاں کا مشہور فلمي گانا جو ايک بار پھر ہِٹ ہو گيا ہے۔ ليکن يہ گانا اُن کي آواز ميں نہيں ہے بلکہ ايک پاکستاني نِژاد برطانوي شہري نے گايا ہے۔ کيا اِس گانے کا نيا روپ بہتر ہے يا پھر اولڈ از گولڈ والی بات درست ہے؟ فيصلہ آپ کا ہے۔

احمدیوں کے ساتھ ریاست کا امتیازی سلوک کیوں؟

پاکستان میں بڑھتی ہوئی مذہبی عدم برداشت نے ملک میں بسنے والی اقلتیوں کی مشکلات میں اضافہ کر دیا ہے۔ جہاں شیعہ، عیسائی اور ہندو برادری ہدف بنتي ہيں، وہاں ایک برادری ایسی بھی ہے جس کے خلاف نہ صرف تشدد کے واقعات روز مرہ کا معمول ہیں بلکہ ریاست کی جانب سے بھی امتیازی سلوک کيا جاتا ہے۔

تفصیل کے ساتھ عنبر شمسی کی رپورٹ۔

اسی حصے میں دیکھیے گا برطانوی دارلامراء کے رکن لارڈ احمد آف ومبلڈن سے گفتگو جو لندن سٹوڈیو میں موجود تھے۔

اس کے بعد شامل ہیں آپ کی جانب سے سوشل میڈیا پر آنے والی آراء۔

تو پھر چلیں

اس حصے میں شامل ہوتا ہے وسعت اللہ خان کے ساتھ ہفتہ وار سلسہ ’تو پھر چلیں‘۔

ایسا کیوں ہے کہ حسن اور مفلوک الحالی يا غربت اکثر ہاتھوں میں ہاتھ ڈالے نظر آتے ہیں۔ ہے نہ عجیب سی بات؟ مگر اتنی بھی عجیب نہیں۔ کم ازکم اس حسین ساحلی گاؤں میں تو بالکل نہیں جہاں وسعت اللہ خان ہميں آج لے کر جا رہے ہیں۔ تو پھر چلیں۔۔

اسی بارے میں