جمعہ پانچ اپریل کا سیربین

جمعہ پانچ اپریل کو نشر ہونے والے بی بی سی اردو سروس کے ٹی وی پروگرام سیربین کے چاروں حصے آپ اس صفحہ پر دیکھ سکتے ہیں۔ یہ پروگرام ایکسپریس نیوز پر نشر کیا گیا تھا۔

سیربین ہفتے میں تین دن یعنی پیر، بدھ اور جمعے کو پاکستان کے مقامی وقت کے مطابق رات گیارہ بجے ایکسپریس نیوز پر نشر ہوتا ہے۔

پاکستان میں انتخابی مہم کیسے بدل رہی ہے

پاکستان ميں عام انتخابات ميں صرف پانچ ہفتے باقي ہيں اور ملک ميں انتخابي جوش و خروش ميں اضافہ ہے۔ نئي روايات جنم لے رہي ہيں اور پراني دم توڑ رہي ہيں۔

بدلتے وقت کے ساتھ سیاسی جماعتوں کی انتخابی مہمات کا انداز بھی بدلا بدلا سا ہے اور لاہور ماضی میں انتخابی گہما گہمی سے پہچانا جاتا تھاـ لیکن کیا تھڑے کی روایتی سیاست اب ٹاک شوز کی نظر ہو گئی ہے؟

دیکھیے لاہور سے صبا اعتزاز کی رپورٹ

انفارميشن ٹيکنالوجي کے اس جديد دور نے انتخابي مہم کے تقاضے بھي بدل ديے ہيں اور اس حوالے سے بات کرنے کے لیے ہمارے کراچی سٹوڈیو میں موجود تھے سينيئر صحافي اور ميڈيا امور کے ماہر بابر اياز

آخر میں سوشل میڈیا پر اس حوالے سے آنے والی آپ کی آراء

ملالہ فنڈ کا اجرا اور برطانیہ کی پاکستان کو ملنے والی امداد

طالبان کے حملے میں زخمی ہونے والی ملالہ یوسف زئی نے سوات میں لڑکیوں کی تعلیم کے لیے قائم کیے جانے والے ملالہ فنڈ کے تحت پینتالیس ہزار ڈالر کی امداد فراہم کرنے کا اعلان بھی کیا ہے جس سے شروع میں چالیس طالبات کو تعلیم دی جائے گی۔ تاہم ان کے آبائی علاقے سوات میں موجود ان کے ساتھ زخمی ہونے والی دو طالبات شازیہ اور کائنات کے لیے زندگی ابھی بھی کافی مشکل ہے۔ احوال ثناء گلزار سے۔

اس کے بعد شامل ہیں عالمی خبریں۔

پاکستان کے سابق وزيرِ خزانہ اور سينيٹر سلیم مانڈوی والا نے کہا ہے کہ برطانیہ کی جانب سے پاکستان کو دی جانے والی مالی امداد کو ٹیکس اصلاحات سے مشروط کرنا مناسب نہيں ہے۔ گزشتہ روز ہی برطانوی پارليماني کميٹي کے اراکین نے مطالبہ کیا ہے کہ پاکستان کو مزید امداد اسی صورت میں ملنی چاہيے جب وہ اپنے ٹیکس کی شرح میں اضافے کو یقنی بنائے۔

نامہ نگار ارم عباسی نے پاکستان کو ملنے والی برطانوی امداد کے چند پہلوؤں کا جائزہ لیا۔

ایران کے جوہری پروگرام پر مذاکرات

دنیا کی چھ بڑی طاقتیں اور ایران قزاقستان کے دارالحکومت الماتے میں تہران کے جوہری پروگرام پر مذاکرات ميں مصروف ہيں۔ مذاکرات کے دوسرے دن اگرچہ کوئی پیش رفت تو نہیں ہوئی لیکن ایرانی مذاکرات کاروں کا کہنا ہے کہ انہوں نے قزاقستان میں اہم اور واضح تجاويز پيش کي ہیں۔ لیکن ایک مغربی سفارتکار نے کہا کہ ایران نے ابھی کوئی ٹھوس تجویز پیش نہیں کی۔ تفصيل کے ساتھ عارف شميم

اسي بارے ميں اسلام آباد ميں ساؤتھ ايشين سٹريٹيجِک سٹيبِليٹي انسٹِٹيوٹ کي ڈائريکٹرماريہ سلطان سے بات چیت بھی اسی حصے میں شامل ہے۔

اس حصے کے آخر میں دیکھیے سوشل میڈیا پر آنے والی آپ کی آراء۔

تو پھر چلیں؟

اس کے بعد شامل ہے ہفتہ وار سلسلہ ’تو پھر چلیں‘۔

آپ نے سنا ہي ہوگا کہ نيت ثابت تو منزل آسان اور عزمِ مُصمم تو پہاڑ بھي رائي کا ڈھير دریا رُخ بدل لیتا ہے اور بیابان ترقی کا گہوارہ بن جاتا ہے۔ یہ سب بظاہر کتابی باتیں لگتی ہیں۔ لیکن آج جب آپ وسعت اللہ خان کے ساتھ راشد آباد جائیں گے تو شايد یہ باتیں اتني کتابی نہ لگیں۔

تو پھر چلیں۔۔۔۔؟

اسی بارے میں