اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

جمعہ چھبیس اپریل کا سیربین، حصۂ دوم

اس حصے میں شامل کی گئیں عالمی خبریں جن میں سب سے پہلے شامل تھی برطانوی وزیر اعظم ڈیوڈ کیمرون کے حوالے سے خبر جن کا کہنا ہے ہے کہ شام ميں کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کے بارے میں محدود شواہد ملے ہیں۔

اسی حوالے سے شامل تھی فراز ہاشمی کی رپورٹ۔

اس کے علاوہ دیگر عالمی خبریں بھی شامل کی گئیں جن میں جنوبی کوریا کی جانب سے شمالی کوریا کے ساتھ مشترکہ صنعتی زون سے اپنے باقی مزدوروں کو نکالنے کا فیصلہ، افغانستان سے خبر جس میں سڑک کے کنارے پڑے ایک آئل ٹینکر کے ملبے سے بس کے تصادم میں پینتالیس افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔

ترکی کے جنوب مشرق میں ایک کرد ملک بنانے کی 30 سالہ مسلح جدوجہد کے بعد کرد باغیوں نے اعلان کيا ہے کہ وہ اگلے دو ہفتوں میں ترکی سے اپنے جنگجو نکال لیں گے۔ اس خبر کی تفصیل خالد کرامت سے۔

آخر میں بنگلہ دیش سے آنے والی خبر جس میں دو روز قبل منہدم ہونے والی آٹھ منزلہ عمارت سے ملنے والی لاشوں کی تعداد تين سو سے تجاوز کر گئی ہے جبکہ اب بھی سینکڑوں افراد لاپتہ ہیں۔ اس واقعہ کے بعد ڈھاکہ میں مظاہرے شروع ہو گئے ہیں۔ کارخانے میں کام کرنے والے مزدور اپنے لیے سکیورٹی کے بہتر انتظامات کا مطالبہ کر رہے ہیں۔ تفصیل خدیجہ عارف سے۔

اسي حوالے سے بات کرنے کے لیے سیربین میں ڈھاکہ ميں بي بي سي کے نامہ نگار امباراسن ايتھيراجن شامل تھے جنہوں نے تازہ ترين صورت حال اور امدادي کاموں کے حوالے سے بتایا۔