جمعہ چھبیس اپریل کا سیربین

جمعہ چھبیس اپریل کو نشر ہونے والے بی بی سی اردو سروس کے ٹی وی پروگرام سیربین کے چاروں حصے آپ اس صفحہ پر دیکھ سکتے ہیں۔ یہ پروگرام ایکسپریس نیوز پر نشر کیا گیا تھا۔

سیربین ہفتے میں تین دن یعنی پیر، بدھ اور جمعے کو پاکستان کے مقامی وقت کے مطابق رات گیارہ بجے ایکسپریس نیوز پر نشر ہوتا ہے۔

ہزارہ صوبے کی تحریک پر انتخابات کا اثر

اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

پاکستان ميں نئے صوبوں کے مطالبات ميں گزشتہ دورِ حکومت ميں خاصي تيزي اُس وقت آئي جب پيپلز پارٹي نے جنوبي پنجاب کو صوبہ بنانے کا نعرہ لگايا۔ ليکن اس کے برعکس صوبہ خيبر پختونخوا کو تقسیم کر کے ایک نیا ہزارہ صوبہ بنانے کی تحریک کو عام انتخابات نے عجیب طریقے سے نقصان پہنچایا ہے۔ تحریک میں شامل تقریباً تمام قابل ذکر سیاستدان قومی جماعتوں کے ٹکٹ لے کر بظاہر تحریک سے الگ ہوگئے ہیں، لیکن ان امیدواروں کا کہنا ہے کہ دراصل تحریک کامیابی کے کنارے پہنچ چکی ہے۔ ايبٹ آباد سے علی سلمان کی رپورٹ

دو ڈھائي برس پہلے ہزارہ صوبے کي تحريک ميں قومي اسمبلي کےسابق اسپيکر گوہر ايوب بھي شامل تھے جو اليکشن سے ذرا پہلے مسلم ليگ نواز ميں شامل ہوگئے۔

گوہر ايوب سے ہمارے نامہ نگار عزيزاللہ خان نے اسي تناظر ميں بات کي اور پوچھا کہ کیا ہزارہ صوبے کی تحریک اب بھی وجود رکھتی ہے یا دم توڑ چکي ہے۔

اس کے بعد دیکھیے سوشل میڈیا پر آنے والی آپ کی آراء

عالمی خبریں

اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

اس حصے میں شامل کی گئیں عالمی خبریں جن میں سب سے پہلے شامل تھی برطانوی وزیر اعظم ڈیوڈ کیمرون کے حوالے سے خبر جن کا کہنا ہے ہے کہ شام ميں کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کے بارے میں محدود شواہد ملے ہیں۔

اسی حوالے سے شامل تھی فراز ہاشمی کی رپورٹ۔

اس کے علاوہ دیگر عالمی خبریں بھی شامل کی گئیں جن میں جنوبی کوریا کی جانب سے شمالی کوریا کے ساتھ مشترکہ صنعتی زون سے اپنے باقی مزدوروں کو نکالنے کا فیصلہ، افغانستان سے خبر جس میں سڑک کے کنارے پڑے ایک آئل ٹینکر کے ملبے سے بس کے تصادم میں پینتالیس افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔

ترکی کے جنوب مشرق میں ایک کرد ملک بنانے کی 30 سالہ مسلح جدوجہد کے بعد کرد باغیوں نے اعلان کيا ہے کہ وہ اگلے دو ہفتوں میں ترکی سے اپنے جنگجو نکال لیں گے۔ اس خبر کی تفصیل خالد کرامت سے۔

آخر میں بنگلہ دیش سے آنے والی خبر جس میں دو روز قبل منہدم ہونے والی آٹھ منزلہ عمارت سے ملنے والی لاشوں کی تعداد تين سو سے تجاوز کر گئی ہے جبکہ اب بھی سینکڑوں افراد لاپتہ ہیں۔ اس واقعہ کے بعد ڈھاکہ میں مظاہرے شروع ہو گئے ہیں۔ کارخانے میں کام کرنے والے مزدور اپنے لیے سکیورٹی کے بہتر انتظامات کا مطالبہ کر رہے ہیں۔ تفصیل خدیجہ عارف سے۔

اسي حوالے سے بات کرنے کے لیے سیربین میں ڈھاکہ سے بي بي سي کے نامہ نگار امباراسن ايتھيراجن شامل تھے جنہوں نے تازہ ترين صورت حال اور امدادي کاموں کے حوالے سے بتایا۔

پاکستانی انتخابات میں فوج کا کردار

اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

پاکستان ميں گیارہ مئی کو ہونے والے تاریخی انتخابات پر سب کی نظریں ہیں۔ پاکستان کے فوجي سربراہ کی جانب سے یقین دہانی کے باوجود سابق حکومت کے دور میں بھی حکومت گرنے کے اندازے اور قياص آرائياں ہوتي رہيں۔ پاکستان کا ماضی اس انتخابی مہم پر کس حد تک اثر انداز ہو سکتا ہے اور پاکستانی فوج کا کردار ان تاریخی انتحابات میں کس حد تک بدلا ہے؟

نامہ نگار ارم عباسی انتخابات سے متعلق بی بی سی کی خصوصی کوریج کے لیے جنوب مغربی پنجاب کے ضلع چکوال گئيں جہاں سے انہوں نے انہي پہلووں کا جائزہ لينے کي کوشش کي ہے۔

پاکستاني سياست ميں فوج کا کردار ۔اس موضوع پر خصوصی گفتگو اسی حصے میں شامل ہے جس میں کراچي سے بي بي سي کے خصوصي نمائندے محمد حنيف اور اسلام آباد ميں سکيورٹي امور کے تجزيہ نگار ريٹائرڈ ائر مارشل شہزاد چوہدري شامل تھے۔

سب سے آخر میں دیکھیے آپ کی جانب سے سوشل میڈیا پر آنے والی آپ کی آراء۔

’تو پھر چلیں‘ کا انتخابی سلسلہ

اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

بدھ چوبیس اپریل سے ہر بدھ اور جمعے کو آپ اس حصے میں دیکھ سکیں گے وسعت اللہ خان کے سلسلے ’تو پھر چلیں‘ کا انتخابی سلسلہ۔

جمہوریت کا مطلب ہے برداشت کرنا اور برداشت ہونا اور اپنی ذاتی ترقی کے ساتھ ساتھ اجتماعی ترقی کی حوصلہ افزائی بھی کرنا۔ کیا پاکستانی جمہوریت اسی راستے پر جا رہی ہے؟ وسعت اللہ خان نے سندھ کے چوتھے بڑے شہر میرپور خاص کی سماجی و نسلی شطرنج کے عکس میں اس کا جواب ڈھونڈنے کی کوشش کی۔ تو پھر چلیں۔۔

اسی بارے میں