اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

جمعہ سات جون کا سیربین، حصۂ دوم

اس حصے میں شامل تھیں عالمی خبریں۔

اقوام متحدہ نے شام کے لیے اپني تاریخ کی سب سے بڑی اپیل کرتے ہوئے کہا ہے کہ اُسے شام ميں اپنی اِمدادی کوششيں جاري رکھنے کے ليے تقريباً پانچ ارب ڈالر درکار ہيں۔ اُدھر یورپی یونین کے امیگریشن حکام نے شامی پناہ گزینوں سے بدسلوکی کرنے پر یونان کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔

دیکھیے سو لوئیڈ رابرٹس کی رپورٹ کاشف قمر کي زباني۔

اس کے بعد ايک نظر ديگر بين الاقوامي خبروں پر۔

امريکي صدر باراک اوباما نے فون اور انٹرنيٹ کي خفيہ نگراني کے نظام کا دفاع کرتے ہوئے کہا ہے کہ اِس پر عمل درآمد کانگريس اور عدالتوں کي سخت نگراني ميں ہو رہا ہے۔

ترکی کے وزیر اعظم نے حکومت کے مخالف مظاہرین کو کسی قسم کي بھي رعایت دینے سے انکار کیا ہے۔

برطانیہ میں کی جانے والی ايک تحقیق میں کہا گیا ہے کہ سال دو ہزار بيس تک برطانیہ میں کینسر ميں مُبتلا افراد کی تعداد مجموعی آبادی کے نصف تک پہنچ جائے گی۔

برطانيہ کي ملکہ الزبتھ نے مرکزي لندن میں بی بی سی کے ہیڈ کوارٹرز کا آج رسمی افتتاح کیا۔

اُنہیں اپنی شادی کی تیسویں سالگرہ کی تیاری ميں مصروف ہونا چاہیے تھا لیکن روسی صدر ولادیمیر پوٹن اور اُن کی اہلیہ نے اعلان کیا ہے کہ ُانہوں نے طلاق کا فیصلہ کیا ہے۔ اِس جوڑے کو گزشتہ کئی سالوں میں بہت کم اکٹھے دیکھا گیا جس کے باعث اُن کی شادي شدہ زندگی کے بارے میں پہلے سے افواہیں گردش کر رہی تھیں۔ تفصیل عارف شمیم سے

نوجوان خواجہ سراؤں کو آپ نے سڑکوں پر بھيک مانگتے اور شاديوں ميں ناچتے ہوئے ديکھا ہو گا۔ اِن نوجوانوں کي زندگي پر لوگ ترس کھاتے ہيں، افسوس کرتے ہيں۔ يہي خواجہ سرا جب بوڑھے ہو جاتے ہيں تو اُن کي زندگي اور بھي تکليف دہ ہو جاتي ہے۔ بوڑھے ہو کر يہ اپني زندگي کيسے گزارتے ہيں؟ ديکھيے لاہور سے علی سلمان کي رپورٹ