جمعہ آٹھ نومبر کا سیربین

جمعہ آٹھ نومبر کو نشر ہونے والے بی بی سی اردو سروس کے ٹی وی پروگرام سیربین کے چاروں حصے آپ اس صفحے پر دیکھ سکتے ہیں۔

سیربین ہفتے میں تین دن یعنی پیر، بدھ اور جمعے کو بی بی سی اردو ڈاٹ کام پر لائیو نشر کیا جاتا ہے۔ یہ پروگرام ایکسپریس نیوز پر بھی نشر کیا گیا تھا۔

تحفظ پاکستان آرٹیننس: متنازع کیوں؟

اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

پاکستانی حکومت نے کہا ہے کہ متنازع تحفظ پاکستان آرڈینس دو ہزار تیرہ کو قومی اسمبلی سے ہر صورت میں پاس کرائے گی۔ بی بی سی سے بات کرتے ہوئے سرحدی علاقوں کے وفاقی وزیر لیفٹیننٹ جنرل (ر) عبدالقادر بلوچ نے کہا ہے کہ حکومت ملکی سلامتی کو سامنے رکھتے ہوئے قوانین بنائے گی چاہے وہ انسانی خقوق کی خلاف ورزی کے زمرے میں ہی کیوں نہ آئیں۔ حزب اختلاف کے بعض رہنماؤں کو خدشہ ہے کہ اسے سیاسی مقاصد کے لیے بھی استعمال کیا جا سکتا ہے۔ اسلام آباد سے ارم عباسی کی رپورٹ۔

اسی آرڈینینس کے بارے میں ہيومن رائيٹس کميشن آف پاکستان کے شریک چيئرمین کامران عارف سے پوچھا کہ ملک کے حالات کے پيش نظر کيا اہم ہے: امن و سلامتي يا پھر چند شخصي آزادياں؟

ملا فضل اللہ امیر تحریک طالبان: حکومتی پالیسی کیا ہے؟

اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

کالعدم تنظیم تحریک طالبان پاکستان کے سابق امیر حکیم اللہ محسود کی امریکی ڈرون حملے میں ہلاکت اور نئے امیر کے انتخاب سے اب بظاہر ایسا لگتا ہے کہ امن مذاکرات کےلیے شروع کی گئی تمام تر کوششیں دم توڑ گئی ہیں۔

لیکن سوال یہ ہے کہ ایسی صورتحال میں آنے والے دنوں میں حکومت اور طالبان کے درمیان مذاکرات کا کوئی امکان پیدا ہوسکتا ہے یا نہیں ، اسی کا جائزہ ہمارے ساتھی رفعت اللہ اورکزئی نے لینے کی کوشش کی ہے۔

اسي بارے ميں پشاور ميں سينیئر صحافي اور تجزيہ کار رحيم اللہ يوسف زئي سے پوچھا کہ ملا فضل اللہ نے تحريک طالبان پاکستان کے سربراہ بنتے ہي توقع کے عين مطابق اعلان کيا ہے کہ وہ پاکستاني حکومت سے امن مذاکرات نہيں کريں گے۔ تو کيا اب مذاکرات مستقبل قريب ميں ممکن ہو پائيں گے؟

دوسری جانب افغانستان ميں امن کونسل کے ترجمان نے کہا ہے کہ طالبان کے امن مذاکرات اور تشدد، دونوں کا افغانستان اور پاکستان پر اثر ہوتا ہے۔ ملا فضل اللہ کي تقرري سے افغانستان پر کيا اثرات ہونگيں اسي بارے ميں بات بي بي سي پشتو سروس کے حميد شجاح سے۔

عرفات کی موت کیسے ہوئی اور فلپائن میں طوفان

اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

فلپائن سے ٹکرانے والا طوفان حايان پانچويں درجے کا طوفان بتايا جا رہا ہے جس کي آمد سے پہلے ہي ہزاروں افراد کو محفوظ مقامات تک پہنچايا گيا تھا۔ ليکن اس کے باوجود تين افراد ہلاک ہوگئے ہيں۔ اس طوفان نے ملک بھر ميں شديد تباہي پھيلائي ہے۔ مزيد تفصيلات کے ساتھ خالد کرامت

ياسر عرفات کي موت قدرتي وجوہات سے نہيں ہوئي۔ اس نتيجے پر ان کي موت کي تفتيش کے ليے بنائي گئي ايک فلسطيني کميٹي پہنچي ہے۔ رمللہ ميں ايک پريس کانفرنس سے بات کرتے ہوئے فلسطيني حکام نے کہا کہ دو ہزار چار ميں ہونے والي ياسر عرفات کي موت کا ملزم صرف اسرائيل ہے۔ فلسطيني حکام کا يہ دعوي سوِس سائنس دانوں کي اس رپورٹ پر مبني ہے جس کے مطابق ياسر عرفات کے جسم سے تابکاري مواد پولونيم کي زيادہ مقدار پائي گئي۔ اسرائيل نے تمام الزامات کي ترديد کي ہے۔ بي بي سي کي مشترقِ وسطي کي نامہ نگار يولينڈ نيل کي رپورٹ

کيوبا کي حکومت کا کہ ملک ميں نجي طور پر چلائے جانے والے درجنوں سنميا حالز اور ويڈيو پارلرز بند کررہي ہے کيونکہ اس کے مطابق وہ غير قانوني ہيں۔ کيوبا ميں بعض بزنسمينوں نے بزنس لائسنس استمعال کرتے ہوئے نجي طور پر چھوٹے تھري ڈي سنميا حال بنارکھے تھے جن ميں زيادہ تر وہ امريکي اور عالمي فلميں دکھائي جاتي تھيں جو عام طور پر کيوبا کے سرکاري سنيما ہالوں ميں نہيں دکھائي جاتي تھيں۔ ہوانہ سے بي بي سي کي سارا رينس فورڈ کي رپورٹ

روم کے جواہرات اور کولمبیا کا شہر بوگوٹا

اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

دنیا میں جواہرات کا ایک بہت ہی قیمتی ذخیرہ اطالوی دارالحکومت روم میں نمائش کے لیے پیش کیا گیا ہے۔ آنکھیں خیرہ کردینے والے اس ذخیرے میں وہ قیمتی ترین اشیا شامل ہیں جو گزشتہ کئی صدیوں میں نیپلز شہر کے محافظ کہے جانے والے راہب سان جنارو کی درگاہ کی نذر کی گئی تھیں۔ اس خزانے کو مالیت کے اعتبار سے برطانوی شاہی جواہرات کے مجموعے یا زار روس کے جواہرات ہم پلہ قرار دیا جاتا ہے۔ اب سے پہلے یہ خزانہ اپنی محفوظ تجوریوں سے شاذونادر ہی نکالا گیا تھا۔ تفصیل کے لیے راجہ ذوالفقار علی۔

اور اپنے ہفتے وار سلسلے ميرا شہر ميں آئيے آج آپ کو سير کراتے ہيں لاطيني يا جنوبي امريکي ملک کولمبيا کے دارالحکومت بوگوٹا کي۔ شايد اس شہر کي بہت سي چيزوں ميں آپ کو اپنے شہر کي بھي جھلک مل جائے۔

اسی بارے میں