اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

’کمزور پاکستان میں سعودی عرب کا اثر و رسوخ‘

سعودی وزیر خارجہ سعود الفیصل کے تقریباً چھ سال کے بعد پاکستان کے اپنے پہلے دورے کے موقع پر مقامی ذرائع ابلاغ میں قیاس آرائیاں کی جا رہی تھیں کہ سعودی وزیر خارجہ پاکستانی حکومت سے پرویز مشرف کو محفوظ راستہ دینے سے متعلق بات کریں گے۔

سعودی وزیرِ خارجہ کا یہ دورہ ایک ایسے وقت میں ہو رہا ہے جب سابق صدر جنرل پرویز مشرف کے لیے مشکل گھڑی ہے۔

اس موضوع پر شفیع نقی جامعی نے صحافی و تجزیہ کار ایاز امیر سے بات کی اور پوچھا کہ سعودی وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ یہ پاکستان کا اندرونی معاملہ ہے تو پھر میڈیا ایسی قیاص آرائیاں کیوں کر رہا ہے۔