اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

جبری شادي کرانے پر سات سال کی قید

انگلینڈ اور ویلز میں آج سے ایک نيا قانون نافذ ہوگيا ہے جس کے بعد زبردستي شادي کرانا ایک جرم ہوگا اور اِس کي سزا سات سال تک قيد ہو سکتي ہے۔

ایک اندازے کے مطابق برطانيہ ميں ہر سال تقریباً آٹھ ہزار لڑکیوں کی زبردستی شادی کر دی جاتی ہے۔ برطانوی ہوم آفس کے فورسڈ میرج یونٹ کے اعداد وشمار کے مطابق گزشتہ برس

تيرہ سو دو متاثرین نے مدد طلب کی اور اِن میں سے بیالس اعشاریہ سات فیصد کیسز کا تعلق پاکستان سے تھا جبکہ انڈیا سے تعلق رکھنے والے کیسز کی تعداد دس اعشاریہ نو فیصد ہے۔