نوری المالکی
اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

دولت اسلامیہ کے خلاف اقدامات پر غور

عراق ميں نوري المالکي وزارت عظميٰ کي دوڑ سے ہٹ گئے اور نئے وزيراعظم کے ليے حيدرالعبادي کا نام آيا اور يوں سياسي استحکام کي راہ بني ہے ليکن دولت اسلاميہ کے شدت پسندوں کی پیش قدمی جاری ہے۔

ليکن کيا يہ کوششیں عراق کو مستحکم اور مضبوط بنا سکیں گی۔ اور کيا شيعہ، سني اور قبائلي تقسيم ختم ہو سکے گي۔ تفصیل کے ساتھ خدیجہ عارف