بابری مسجد
اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

کيا بابری مسجد تنازع بات چيت سے حل ہو سکتا ہے؟

انڈيا میں ایودھیا کی بابری مسجد چھ دسمبر انيس سو بانوے کو منہدم کی گئی تھی۔ اِس مقام پر ایک عارضی مندر بنا ہوا ہے لیکن زمین کی ملکیت کا تنازعہ ابھی تک حل نہیں ہو سکا۔

رام مندر تحریک کی علمبردار تنظيم وشو ہندو پریشد نے حکومت سے کہا ہے کہ بات چیت سے یہ زمین نہیں ملتی تو وہ ایک قانون پاس کر کے اِس زمین کو مندر کے حوالے کر دے۔ کيا يہ تنازع بات چيت سے حل ہو سکتا ہے؟

نامہ نگار شکیل اختر نے یہی جاننے کی کوشش کي۔