اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

’معاشرہ مذہبی انتہاپسندوں کے قبضے میں ہے‘

پاکستان کے صوبہ پنجاب کے دارالحکومت لاہور میں اتوار کو پولیس نے مقدس اوراق کو مبینہ طور پر نذرِ آتش کیے جانے کے الزام میں ایک شخص کے خلاف توہینِ مذہب کی دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا تھا۔اس واقعے کے بعد ایک مشتعل ہجوم نے ایک عیسائی بستی میں توڑ پھوڑ کی اور گرجا گھر کو نقصان پہنچایا۔

اسی سلسلے میں پنجاب یورنیورسٹی کے ڈیپارٹمنٹ ماس کمیونیکیشن کے سابق سربراہ پروفیسر ڈاکٹر مہدی حسن سے ہماری ساتھی شفیح نقی جامعی نے بات کی اور ان سے جاننا چاہا کہ پاکستان میں پائی جانے والی انتہا پسند اور شدت پسند سوچ سے معاشرے کو کیا خطرات لاحق ہیں۔