اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

ایک طالبِ علم، شدت پسند کیسے بن گیا؟

تیونس میں گذشتہ جمعے کو ایک ہوٹل پر حملے ميں اڑتیس افراد ہلاک ہو گئے تھے جس کے بعد حکام کے مطابق چند افراد کو گرفتار کر ليا گيا ہے۔

اِن ہلاکتوں کا ذمہ دار تئیس سالہ سیف الدین ریزگي کو قرار دیا جا رہا ہے۔ لیکن ایک طالبِ علم، شدت پسند کیسے بن گیا؟

بی بی سی کے فرگل کین نے حملے کے مقام سے تقریباً تین گھنٹے کی مسافت پر واقع ریزگی کے آبائی گاؤں گافور جا کر اُن کے خاندان والوں سے ملاقت کی۔

فرگل کین کی رپورٹ پیش کر رہے ہیں غضنفر حیدر