اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

دو رخي ترک پالیسي کا نتيجہ کیا نکلے گا؟

ترکی کے علاقے سروچ کے دھماکے میں کم از کم 30 افراد کی ہلاکت کے بعد، کرد جنگجوؤں نے انتقاماً ترک پولیس اہلکاروں کو نشانہ بنایا۔ ان پولیس اہلکاروں کی ہلاکتیں ترکی میں کرد آبادی اور حکومت کے درمیان بڑھتی ہوئی کشیدگی کی عکاس ہیں۔ کرد کہتے ہیں کہ ترک حکومت دولت اسلاميہ کي مدد کر رہی ہے اور اسے دولت اسلاميہ کي نہیں بلکہ شمالي شام ميں کردوں کے بڑھتے ہوئے اثر و رسوخ کي فکر ہے۔ تو کيا يہ مبينہ دو رخي ترک پالیسی کا نتيجہ ہے؟ تفصيل کے ساتھ عضنفر حيدر