اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

ترکی کا اصل ہدف دولتِ اسلامیہ نہیں

تُرکي کے صدر رجب طيب اردوگان کا کہنا ہے کہ کُرد جنگجؤوں کي جانب سے تُرکي ميں حملوں کي وجہ سے ممکن نہيں کہ کُردوں کے ساتھ جنگ بندی جاري رکھی جا سکے۔ اُدھر خود کو دولت اسلاميہ کہنے والي شدت پسند تنظیم اور کُرد جنگجوؤں کے خلاف تُرکی کی فوجی مہم پر بلائے گئے نیٹو اجلاس کے اختتام پر نيٹو نے تُرکي کے ساتھ مکمل يکجہتي کا اعلان کيا ہے۔ تفصيل کے ساتھ غضنفر حيدر۔