اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

’بیٹی کو سپرد خاک نہیں، سپرد سائنس کیا‘

ايک ننھي سي جان اور وہ بھي کينسر کے سبب جسم چھوڑنے کو تھي کہ عين موت کے وقت والدين نےبیٹي کے مختلف حصے منجمد کرا دیے وہ اس اُميد پر کہ ايک دن سائنسی ترقي اُن کي بيٹي ’ميتھرين ورات‘ کو پھر جلا دے سکے گي۔ تھائي لينڈ کے والدين اور گُڑيا سي بٹيا کي کہاني زياد ظفر کي زباني۔