اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

گھر سے کام کرنے والے مزدوروں کے مسائل

پاکستاني معيشت کے غیر رسمی شعبے میں کام کرنے والے مزدوروں کو سرسٹھ سال بعد بھی مزدور کا درجہ بھی نہیں مل سکا۔ غير سرکاري تنظيموں کے اندازوں کے مطابق اِن مزدوروں کی تعداد دو کروڑ کے قریب ہے، جن ميں زيادہ تعداد خواتين کي ہے لیکن اُن کے حقوق اور زندگیوں کو تحفظ فراہم کرنے کے لیے کوئی قانون ہی موجود نہیں۔ حالانکہ پاکستان اِس حوالے سے کئی بین الاقوامی معاہدوں پر دستخط بھی کرچکا ہے۔ یہ مزدور کس طرح گھروں میں کام کرتے ہیں اور کن مسائل کا سامنا کرتے ہیں۔۔۔ دیکھتے ہیں کراچی سے شمائلہ خان کی رپورٹ۔