خیبر پختونخوا میں ایک تباہ شدہ سکول
اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

’کے پی کے تباہ شدہ بیشتر سکول تعمیر‘

خیبر پختونخوا میں شدت پسندي کے نتيجے ميں ساڑھے سات سو سکول تباہ ہوئے تھے جن میں سے بیشتر کی تعمير مکمل اور وہاں تعليم شروع ہو چکی ہے۔ سکولوں پر شدت پسندوں کے حملوں کے سبب ايک بڑی تعداد میں بچوں نے سکول جانا ہی چھوڑ دیا تھا۔

پشاور کے مضافاتی علاقے ’بڈابیر‘ اور ’متنی‘ میں سب سے زیادہ سکولز نشانہ بنے تھے۔ ماضی میں طالبان کاگڑھ سمجھے جانے والے علاقے متنی اور عدیزی سے ہمارے نامہ نگار عزيز اللہ خان کي رپورٹ۔