اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

زمینیں تو ملیں لیکن قبضہ نہیں

سندھ کے 17 اضلاع میں مارچ 2009 میں بے زمین کسانوں اور خاص طور پر خواتین کسانوں میں سرکاری زمین تقسیم کرنے کا فیصلہ کیا گیا تھا تاکہ انھیں معاشی طور پر مستحکم کیا جا سکے۔ يہ کسان کئی قانونی پیچیدگیوں، قبضوں اور پانی کی قلت جیسے مسائل کا سامنا کر رہے ہیں اورکاغذات ہونے کے باوجود انھیں قبضہ نہیں مل سکا۔ رياض سہيل کي رپورٹ۔