اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

’ملزم اپنی مرضی کا جج نہیں مانگ سکتا‘

پاکستان کے وزیر اعظم نواز شریف نے پناما پیپرز کے افشا ہونے کے بعد عوامی دباؤ پر ایک انکوائری کمیشن کی تشکیل کے لیے سپریم کورٹ آف پاکستان کے چیف جسٹس کو خط لکھنے کا اعلان کیا ہے۔ مگر اس کمیشن کی تشکیل کو پیپلز پارٹی کے چوہدری اعتزاز احسن اور تحریک انصاف کے عمران خان نے مسترد کردیا ہے۔

برطانیہ میں مقیم سینئیر وکیل اور پاکستان کی سیاست اور قانونی معاملات پرگہری نظر رکھنے والے بیرسٹر افتخار احمد نے کہا ہے کہ جس وزیر اعظم پر منی لانڈرنگ اور آف شور کمپنیز رکھنے کے الزامات لگے ہیں وہی اپنے لیے انکوائری کمیشن کرائے، اسے کون درست کہے گا۔

ان کے بقول ہونا تو یہ چاہیے تھا کہ جو الزامات لگے ہیں ان پر فوجداری قوانین کے تحت کاروائی ہونی چاہیے تھی نہ کہ انکوائری! سنئیے بیرسٹر افتخار احمد کی بی بی سی گفتگو۔