اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

’اخلاقیات کا دائرہ طے کرنے کا اختیار کسی کے پاس تو ہونا چاہیے‘

حکومت آن لائن کوئی بھی مواد ہٹانے یا بلاک کرنے کا اختیار عدالت کی بجائے اپنی ایگزیکٹیو باڈی یعنی پی ٹی اے کو ہی دے رہی ہے۔ تو کیا اس سے شہریوں کی آزادی رائے پر قدغن لگنے کا احتمال نہیں ہو گا؟ دوسرا یہ کہ پی ٹی اے کی نگرانی کون کرے گا کہ وہ اختیارات کا غلط استعمال نہ کرے؟ اسی سلسلے میں ہماری ساتھی ارم عباسی نے آئی ٹی کی وزارت کی قائمہ کمیٹی کے رکن اویس لغاری سے بات کی۔