اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

ترکي، يونان اور اٹلي میں تارکین وطن کی ہزاروں بےنام قبریں

بي بي سي کي ايک خصوصي تحقیقاتی رپورٹ سے پتہ چلا ہے کہ سنہ 2014 سے اب تک 1700 سے زيادہ مرد، خواتین اور بچے ايسے ہیں جو ايک نئی زندگي کي تلاش میں بحیرہ روم کو عبور کر کے یورپ پہنچنے کی کوشش میں مارے گئے اور اب بےنام قبروں ميں دفن ہیں۔

يہ قبريں ترکي، يونان اور اٹلي ميں ملي ہيں۔

پچھلے دو سال میں آٹھ ہزار سے زيادہ پناہ گزين يورپ تک پہنچنے کي کوشش ميں ہلاک ہوئے ہیں۔ ان میں سے زيادہ تر کی لاشیں تو سمندر برد ہو گئیں ليکن کچھ کو سمندر کي لہريں يونان، اٹلي اور ترکي سے ساحلوں پر لے آئیں۔

بی بی سی کی رامي روہايم کي رپورٹ جو حسين عسکري کی آواز میں ہے۔