اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

چھوٹو گينگ جيسے گروہوں پر قابو پانا مشکل کيوں؟

بھتہ، اغوا برائے تاوان ، ڈکیتیاں اور مقامی خواتین کو ہراساں کرنا چھوٹو گینگ کا معمول رہا ہے۔ لیکن صرف چھوٹو ہی نہیں راجن پور اور رحیم یار خان کے بیچ دریائی پٹی کا علاقہ دہائیوں سے درجنوں جرائم پیشہ گینگز کا آشیانہ رہا ہے ـ پولیس ان کے خلاف بار بار کارروائی کرنے کے دعوے تو کرتی رہی لیکن آخر میں بگڑتے حالات سے نمٹنے کے لیے فوج کو آپریشن کرنا پڑا۔ وہ کیا وجوہات ہیں جن کے نتیجے میں جنوبی پنجاب اس طرح کے جرائم پیشہ گروہوں کا گڑھ بن رہا ہے۔ یہ علاقہ جرائم پیشہ افراد اور شدت پسندوں کے سکیورٹی اداروں سے بچنے کے لیے ایک محفوظ پناہ گاہ کیوں اور کیسے بنا؟ راجن پور سے نامہ نگار صبا اعتزاز کی رپورٹ