اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

ہلاک شدت پسندوں کے خاندان بھی تباہ

شدت پسندي کے حملے کا شکار ہونے والے خاندان شديد دکھ، صدمے اور مسائل کا شکار ہوتے ہيں۔ ليکن جو لوگ شدت پسندي ميں ملوث ہوتے ہيں اُن کے خاندان والے بھي سُکھ سے نہيں رہ پاتے۔ پاک پتن کے ايک گاؤں کا رہائشي ذوالفقار نذير دو ہزار چودہ میں رائےوِنڈ میں وزیر اعظم نواز شریف کی رہائش گاہ پر مبينہ شدت پسند حملے کی کوشش کے دوران پولیس کے ہاتھوں ہلاک ہو گیا تھا۔ اب اس کے رشتہ داروں کا کيا حال ہے؟ سنیئے اُس کي ماں کي زبانی۔