حادثے کا شکار طیارہ سیاحوں کی توجہ کا مرکز

تصویر کے کاپی رائٹ Enrico Fabian

انڈیا کے دارالحکومت دہلی کے نواح میں ایک چٹیل میدان حالیہ دنوں لوگوں کی توجہ کا مرکز بن گیا ہے۔

اس کا سبب یہ ہے کہ ایک ہفتے قبل یہاں ایک چھوٹا طیارہ انجن کی خرابی کی وجہ سے گر گیا تھا۔

اس طیارے کا ملبہ ابھی تک وہاں پڑا ہوا ہے اور اس کے گرد پولیس کا گھیرا ہے اور ’اسے ہاتھ مت لگائیں‘ کا ٹیپ لگا ہوا ہے۔ اس پر سوار ساتوں افراد زندہ بچ گئے ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Enrico Fabian

پولیس کا کہنا ہے کہ گذشتہ منگل سے اب تک سینکڑوں افراد اس طیارے کو دیکھنے آئے ہیں جو کہ جنوب مغربی دہلی کے خیر گاؤں میں پہلے گرا پھر اچھلا اور پھر 200 میٹر تک گھسٹنے کے بعد ٹھہرگیا۔

صحافی آتش پٹیل بتاتے ہیں کہ ’جب میں اس جگہ پہنچا تو بہت سے مقامی لوگوں کو دیکھا جو کئی کلومیٹر سے پیدل یا اپنی موٹر سائیکل پر آئے اور طیارے کے ساتھ اپنی سیلفی لینے یا گروپ تصویر لینے میں مشغول تھے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Enrico Fabian

’بعض خاندان ادھر سے گزر رہے تھے تو انھوں نے سوچا کہ وہ تھوڑی دیر کے لیے اسے دیکھ لیں۔‘

ایک آٹو رکشا چلانے والا اپنے خاندان کے ساتھ وہاں آیا تھا جس میں دو بچے بھی شامل تھے۔ اس نے کہا: ’ہم یہ منظر دیکھنا چاہتے تھے۔ ہم نے اسے ٹی وی پر دیکھا تھا۔ اچھی بات یہ ہے کہ اس میں کسی کا جانی نقصان نہیں ہوا۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ Enrico Fabian

اپنے خاندان کے ساتھ آنے والی ایک درمیانی عمر کی گھریلو خاتون بھان وتی نے کہا: ’ہم پہلے کبھی طیارے پر نہیں سوار ہوئے ہیں اور اس کے اس قدر پاس نہیں گئے ہیں۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ Enrico Fabian

اسے وہاں سے جلد ہی ہٹا لیا جائےگا اور ’بیچ کرافت ایئر سی 90‘ نامی طیارے کے پاس دو کرین پہنچ چکی ہیں اور اس کے مالک ’الکیمسٹ ایئرویز‘ نے اپنے عملے کو وہاں بھیج دیا ہے تاکہ وہ طیارے کے پرزے علیحدہ کرکے اسےوہاں سے ہٹائیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Enrico Fabian

اس طیارے سے ریاست بہار کے ایک شدید بیمار شخص کو اس کے ڈاکٹر اور اہل خانہ کے ساتھ دہلی سے ملحق شہر گڑگاؤں لے جایا جا رہا تھا لیکن وہ اپنی منزل پر نہیں پہنچ سکا اور دس کلومیٹر پہلے ہی حادثے کا شکار ہو گيا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Enrico Fabian

جہاں طیارہ گرا تھا اس سے کچھ فاصلے پر تعمیراتی کام پر معمور ایک مزدور انیل راٹھوڑ نے کہا: ’مجھے یاد ہے کہ پہلےطیارے کا ٹائر باہر آيا تھا۔ ہم وہاں سے بھاگے کہ اب طیارہ میں آگ لگ جائے گی۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ Enrico Fabian

لیکن خوش قسمتی سے ایسا نہیں ہوا اور اس پر سوار سب لوگ بحفاظت نکل آئے۔ انڈیا میں شہری ہوا بازی کے ضابطہ کار محکمے نے اس حادثے کی جانچ کا حکم دیا ہے۔

اسی بارے میں