جز یرے میں تباہی کا ایک منظر
اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

کردوں کا تُرک حکومت پر ہلاکتوں کا الزام

تُرک سکیورٹی فورسز کے ہاتھوں مبینہ طور پر عام لوگوں کی ہلاکتوں کے حوالے سے سامنے آنے والے شواہد کی اقوامِ متحدہ تحقیقات کرنا چاہتا ہے۔

تُرک سکیورٹی فورسز ملک کے شمال مشرقی علاقے جيِزرے میں کُرد شدت پسندوں سے لڑ رہی ہے۔ مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ اب تک ايک سو ساٹھ لوگ ہلاک ہو چکے ہیں۔’

یہ ہلاکتیں مبینہ طور پر اِس سال کے شروع میں ہوئیں۔ تُرک وزارت خارجہ اِن الزامات کی تردید کرتی ہے۔

جيريمي بوئن کي رپورٹ پيش کر رہے ہيں کاشف قمر