اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

مدرسے کو فنڈز دینے کے معاملے پر پختونخوا حکومت کو تنقید کا سامنا

حال ہی میں خیبر پختونخوا کی صوبائی حکومت نے مدرسہ دارالعلوم حقانیہ کے لئے رواں سال کے بجٹ میں تیس کروڑ روپے مختص کئے ہیں۔کئی طالبان رہنما اس مدرسے سے فارغ التحصیل ہیں اور ماضی میں مدرسہ حقانیہ اور اس کے سربراہ مولانا سمیع کا نام شدت پسندوں کے ساتھ جوڑا جاتا رہا ہے۔ خیبرپختونخوا کی حکومت کے اس فیصلے کو بعض حلقوں کی جانب سے تنقید کا نشانہ بنایا گیا ہے۔ تفصیل نامہ نگار خدائے نور ناصر کی رپورٹ میں۔